وفاقی کابینہ کا اجلاس 20 اپریل کو طلب کرلیا گیا
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

وفاقی کابینہ کا اجلاس 20 اپریل کو طلب کرلیا گیا

وفاقی کابینہ کا اجلاس 20 اپریل کو طلب کیا گیا ہے، جس میں 13 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا جائے گا۔

کابینہ ایجنڈے کے مطابق اجلاس میں کرتار پوری راہداری منصوبے کو پیپرا رولز سے استثنیٰ دینے کی منظوری دی جائے گی۔

وفاقی کابینہ اجلاس کے ایجنڈے میں اشیائے خور و نوش کی طلب و رسد کے ریکارڈ کے لیے ڈیٹابیس کے قیام کی منظوری بھی دی جائے گی۔


ایجنڈے میں اقوام متحدہ (یو این) کی آرمرڈ گاڑیاں کراچی سے کابل لے جانے کی اجازت کی سمری شامل ہے۔

اجلاس میں وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے توانائی تابش گوہر گردشی قرضے کے خاتمے کا پلان کابینہ میں پیش کریں گے۔

کابینہ کے سامنے ڈاکٹر عشرت حسین پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن (پی آئی اے) کی ری اسٹرکچرنگ پر بریفنگ دیں گے۔

اجلاس میں وفاقی کابینہ فیڈرل میڈیکل ٹیچنگ آرڈیننس کے تحت بورڈ آف گورنرز کی تعیناتی کی منظوری دے گی۔

وفاقی کابینہ اسٹریٹجک ایکسپورٹ کنٹرول ڈویژن کے اختیارات منتقل کرنے کی سمری پر غور کرے گی۔

اجلاس میں کابینہ نیشنل انشورنس کمپنی کے چیف ایگزیکٹو اور جوائنٹ انوسٹمنٹ کمپنیز کے بورڈ آف ڈائریکٹر کی تعیناتی کی منظوری دے گی۔

کابینہ اجلاس کے ایجنڈے میں ایک بار پھر نوشہرہ میں ریلوے کی زمین پر کثیرالمنزلہ عمارت کی تعمیر کا معاملہ شامل کیا گیا ہے۔

اس موقع پر اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کے 7 اپریل، کمیٹی برائے ادارہ جاتی اصلاحات، اسٹیٹ اون انٹرپرائزز کے اجلاسوں کے فیصلوں کی توثیق متوقع ہے۔

قومی خبریں سے مزید