• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کیریئر کے ابتدا میں میوزک ڈائریکٹر نے میری آواز کو مردانہ قرار دیا، سنیدھی چوہان

بھارتی گلوکارہ سنیدھی چوہان نے انکشاف کیا ہے کہ کیریئر کے ابتدا میں ان سے کہا گیا تھا کہ ان کی آواز مردانہ قسم کی ہے، اور انھیں اپنا بوریا بستر پیک کرلینا چاہیے۔ 

دنیا میں تقریباً ہر شخص کامیابی حاصل کرنے سے پہلے سے مشکلات کا شکار رہتا ہے، تاہم کامیابی ملنے کے بعد وہ ایک مرتبہ اس کا اظہار ضرور کرتا ہے۔ 

ایسا ہی سنیدھی چوہان نے بھی اپنے کیریئر کے ابتدا میں آنے والی پریشانیوں سے متعلق بتایا کہ انھیں ابتدا میں کس طرح میوزیک ڈائریکٹرز کی جانب سے مسترد کیا جارہا تھا۔ 

انھوں نے بتایا کہ ایک میوزک ڈائریکٹر نے ان سے کہا تھا کہ ان کی آواز مردانہ ہے۔


سنیدھی کا کہنا تھا کہ میوزک ڈائریکٹر نے ان سے کہا تھا کہ ان کی آواز بہت زیادہ بھاری ہے، ایسا محسوس ہوتا ہے کہ کسی اداکارہ پر ایک مرد کی آواز سیٹ کی گئی ہے۔ 

ان کا کہنا تھا کہ ڈائریکٹر نے کہا تھا کہ ابھی ایک دو سال کی بات ہے، اس کے بعد تم گھر چلی جاؤ گی۔ 

اسی طرح انھوں نے ایک اور ڈائریکٹر کا نام لیے بغیر کہا کہ اس نے مجھ سے لتا جی کا گایا ہوا گانا ’لگ جا گلے‘ اسی نوٹس میں گانے کا کہا، جب میں نہیں گا پائی تو اس نے کہا کہ ’بیٹا تم اس ریاض کیا کرو۔‘

سنیدھی نے بتایا کہ جب وہ بالی ووڈ میں کامیاب ہوگئی تو ان دونوں ڈائریکٹرز نے ان کے ساتھ کام بھی کیا۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید