آپ آف لائن ہیں
جمعرات23؍ رمضان المبارک 1442ھ6؍مئی 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

عائشہ عمر کے مشرقی لباس اور فیض کے شعر کے انٹرنیٹ پر چرچے

پاکستان کی باصلاحیت فنکارہ عائشہ عمر کی جانب سے سوشل میڈیا پر اپنی نئی تصویروں کے ساتھ مشہور زمانہ شاعر فیض احمد فیض کا ایک شعر شیئر کیا گیا ہے، عائشہ عمر کے چاہنے والوں کو اُن یہ انداز خوب بھا گیا ہے۔

پاکستان شوبز انڈسٹری میں متعدد شعبوں، اداکاری، گلوکاری، ماڈلنگ اور میزبانی میں نام بنانے والی فنکارہ عائشہ عمر اپنے مداحوں کے ساتھ سوشل میڈیا کے ذریعے رابطے میں رہتی ہیں، عائشہ عمر کے مداحوں کو بھی اُن کی جانب سے آنے والی ہر نئی پوسٹ کا انتظار ہوتا ہے۔

عائشہ عمر نے اپنے انسٹا اکاؤنٹ پر  اپنی دو نئی خوبصورت مشرقی جوڑے میں ملبوس تصویریں شیئر کی ہیں جن میں وہ نہایت حسین نظر آ رہی ہیں۔


عائشہ عمر کی جانب سے اس پوسٹ کے کیپشن میں فیض احمد فیض کی مشہر زمانہ نظم ’ ہم دیکھیں گے‘ کا ایک شعر لکھا گیا ہے جو کہ کچھ یوں ہے،’ ہم دیکھیں گے۔۔۔ لازم ہے کہ ہم بھی دیکھیں گے۔۔۔وہ دن کہ جِس کا وعدہ ہے، جو لوحِ ازل میں لِکھا ہے۔۔۔ ہم دیکھیں گے۔۔۔‘

عائشہ عمر کی ان تصویریوں پر تا حال ہزاروں لائیکس اور کمنٹس آ چکے ہیں جبکہ مداحوں کا اُن کی تعریف کرتے ہوئے کہنا ہے کہ عائشہ عمر کی ان تصاویر نے اُنہیں اپنا دل تھامنے پر مجبور کر دیا ہے۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید