سوشل میڈیا پر موسیٰ کا نام ٹاپ ٹرینڈ بن گیا
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سوشل میڈیا پر موسیٰ کا نام ٹاپ ٹرینڈ بن گیا


عینک پہن کر بدصورت لگتے ہو، اسکول میں ساتھیوں کے مذاق نے ننھے طالب علم کے اعتماد کو توڑ کر رکھ دیا، مگر والد کی بدولت سوشل میڈیا پر موسیٰ کا نام ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔

بیٹے کے عینک پہننے سے انکار پر، برطانیہ میں مقیم پاکستانی والد کے سوشل میڈیا پوسٹ پر دنیا بھر سے لوگوں کے محبت بھرے پیغامات کا ڈھیر لگ گیا۔

یہ ننھا طالب علم موسیٰ ہے، جس کے والد نے سوشل میڈیا پر پیغام جاری کیا کہ اسکول میں بچے موسی کو چڑاتے ہیں کہ وہ عینک پہن کر بہت برا لگتا ہے، اب موسیٰ چشمہ لگانے میں ہچکچارہا ہے، چلو دنیا والوں سے پوچھیں موسیٰ گلاسز میں کیسا دکھتا ہے؟ پھر کیا تھا، اس کے بعد دنیا بھر سے محبت بھرے پیغامات کا ڈھیر لگ گیا۔

کسی نے کہا سوپر مین، تو کسی نے آئرن مین، کسی نے ہیری پوٹر تو کسی نے Dexter سے ملا دیا، موسیٰ ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔

کسی نے کہا کہ  موسیٰ تم اسٹار ہو، بل گیٹس، سندر پچائی، اسٹیو جابز، دنیا کے ذہین اور کامیاب ترین افراد عینک لگاتے ہیں۔

اداکار عدنان صدیقی نے عینک پہننے کو کتابیں پڑھنے کے شوق رکھنے کی نشانی قرار دیتے ہوئے کہا کہ  میں تمہارے گلاسز کا فین ہوں، تم کتنے پیارے دکھتے ہو، گلاسز پہن کر میرا ساتھ دو۔

علی گُل پیر نے بھی یہی جذبات ظاہر کیے، کہا چشمہ پہننے والے تو زیادہ ہینڈسم ہوتے ہیں، اب مجھے ہی دیکھ لو۔

محمد عامر، امام الحق، گلوکارہ میشا شفیع، بھارتی اداکارہ پوجا بھٹ بھی موسی کے مداح بن گئے۔

والدین نے چشمہ پہننے والے اپنے بچوں کی تصاویر لگائیں، انٹرنیٹ پر عینک لگانے والے بچوں کا کلب بن گیا۔

موسیٰ کے والد کے پیغام نے اس پریشان کن مسئلے کی نشاندہی کی، دنیا بھر میں جانے کتنے بچے شکار بنتے ہیں، کس کو کالا، موٹا، چھوٹا کہہ کر چڑایا جاتا ہے، بچے خود پر اعتماد کھو بیٹھتے ہیں، عملی زندگی میں کسی قابل نہیں سمجھتے۔

جب بھی بچوں کو تضحیک کا سامنا ہو تو اساتذہ اور والدین کو ان کے ساتھ نہایت شفقت سے پیش آنا چاہیے، انہیں احساس کمتری سے باہر نکالیں اور کامیابی کا اعتماد دیں۔

والد کے مثبت رویے نے موسیٰ کا کھویا اعتماد واپس لوٹا دیا۔

ایک ویڈیو پیغام میں ننھے موسیٰ نے سب کا شکریہ ادا کیا اور اعتماد سے گلاسز لگانے کی یقین دہانی کروائی۔

خاص رپورٹ سے مزید