• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

قوم پرست رہنما کا بیٹا لاپتہ والد پہلے ہی 5 سال سے گمشدہ ہے

حیدرآباد ( بیورو رپورٹ) قاسم آباد تھانے کی حدود میں قوم پرست رہنما کا بیٹالاپتہ ہوگیا‘ والد پہلے ہی 5سال سے لاپتہ ہے‘ وائس آف مسنگ پرنسز کی جانب سے سندھ یونیورسٹی کے طالبعلم کو لاپتہ کرنے کی تصدیق‘ 20جون کو سندھ بھر میں احتجاج کااعلان کردیا ۔ تفصیلات کے مطابق جمعرات کی شب قاسم آباد کے رہائشی سندھ یونیورسٹی پولیٹکل سائنس ڈیپارٹمنٹ کے فائنل ایئر کا طالبعلم سجاد ایوب کاندھیڑوپکوڑا اسٹاپ پر اپنے دوست کے انتظار میں کھڑا تھا کہ بغیر نمبر پلیٹ گاڑی میں سوار سادہ لباس اہلکار اس کی آنکھوں پر پٹی باندھ کر گرفتارکرکے لے گئے اور نامعلوم مقام پر منتقل کردیاہے۔ سجاد ایوب کاندھیڑوکی بہن ماروی کاندھیڑونے کہاہے کہ والد ایوب کاندھیڑوپہلے ہی 5سال سے لاپتہ ہیں اب چھوٹے بھائی کو بھی لاپتہ کردیاگیاہے۔ وائس آف مسنگ پرنس کی کنوینر سورٹھ لوہار نے سجاد ایوب کو لاپتہ کرنے کی تصدیق کرتے ہوئے فوری طورپر اس کی رہائی کا مطالبہ کیا ہے اورکہاہے کہ 20جون سے سندھ بھرمیں لاپتہ افرادکی بازیابی کے لئے شکارپور سے آزادی مارچ شروع کیاجائے گا اوراحتجاجی تحریک کااعلان کیاجائے گا۔

اہم خبریں سے مزید