• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

وزارت توانائی اور جرمن ادارے میںقابل تجدید توانائی کا معاہدہ

اسلام آباد (خصوصی نمائندہ)قابل تجدید توانائی کی استعداد بڑھانے کیلئےوزارت توانائی اور جرمن ادارے جی آئی زیڈ کے درمیان معاہدہ طے پا گیاجس کا مقصد پاکستان میں توانائی کی منتقلی میں موثر کردار ادا کرنا ہے،جرمن ادارہ پاکستان میں قابل تجدید توانائی کی استعداد کے منصوبے کا آغاز کریگا،منصوبے پر81لاکھ یورو لاگت آئے گی ، معاہدے کے تحت قابل تجدید اور توانائی بچت منصوبے پر عملدرآمد یقینی بنایا جائیگا ترجمان پاور ڈویژن کے مطابق جی آئی زیڈ وزارت انرجی اور متبادل توانائی بورڈ کو ٹیکنیکل تعاون فراہم کریگا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری پاور ڈویژن علی رضا بھٹہ نے کہا کہ جی آئی زیڈ اور وزارت توانائی کے درمیان تعاون سے متبادل ذرائع سے پیداوار میں بہتری لانے میں مدد ملے گی ، موجودہ6فیصد متبادل توانائی کی پیداوار کو 2025 تک سے 20فیصدتک لایا جائیگاجبکہ متبادل توانائی کی پیداوار 2030تک کل پیداوار کا 30 فیصد ہو جائیگی، جی آئی زیڈ کے کنٹری ڈائریکٹرٹوبیاس بیکر نے کہا کہ منصوبہ سے شفاف انرجی پر انحصار بڑھے گا، شمسی توانائی کی پیداوار نیشنل گرڈ اور دیہی علاقوں کو فراہم ہوگی ،معاہدے سے کلین انرجی ٹیکنالوجیز کی ترقی میں مدد ملے گی اور یہ منصوبہ پاکستان کی دیہی علاقوں میں بجلی فراہمی کی حکمت عملی میں مددفراہم کرے گا، پاکستان جرمنی قابل تجدید توانائی فورم تعاون جاری رکھے گا۔
اسلام آباد سے مزید