• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

نیشنل ٹی20 کپ: لیگ مرحلہ ختم، 3 سنچریاں بنیں


نیشنل ٹی20 کپ کا لیگ مرحلہ ختم ہوگیا، ایونٹ میں شریک 6 ٹیموں نے 10،10 میچز کھیلے اور سیمی فائنل کی 4 ٹیمیں بھی سامنے آگئیں۔

آخری لیگ میچ میں ناردن کے خلاف فتح کے ساتھ ہی خیبرپختونخوا پوائنٹ لسٹ پر پہلے نمبر پر آگئی ہے جبکہ دوسرے نمبر پر سینٹرل پنجاب کی ٹیم ہے۔

ایونٹ کے لیگ مرحلے کے اختتام پر سندھ کی ٹیم تیسرے اور ناردرن کی ٹیم چوتھے نمبر پر براجمان ہے جبکہ ساؤتھ پنجاب 5ویں اور بلوچستان چھٹے نمبر پر رہی ہے۔

بیٹنگ میں انفرادی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے تو خیبرپختونخوا کے صاحبزادہ فرحان 368 رنز کے ساتھ پہلے، سندھ کے شرجیل خان 339 کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

خیبرپختونخوا کے افتخار احمد 319 رنز کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہیں، ان تینوں ہی بیٹسمینوں نے 10، 10 لیگ میچز کھیلے ہیں جبکہ ناردرن کے حیدر علی نے 8 میچز میں 317، بابراعظم 6 میچوں میں 286 رنز بناکر پانچویں نمبر پر ہیں۔

بولنگ میں پہلی پوزیشن خیبرپختونخوا کے عمران خان کی ہے جنہوں نے 15وکٹ حاصل کیں، جبکہ آصف آفریدی، رومان رئیس اور شاہین شاہ آفریدی نے 12، 12وکٹیں اپنے نام کررکھی ہیں، حسن علی اور جنید خان 11، 11 وکٹوں کے ساتھ نمایاں بولرز ہیں۔

ایونٹ میں 3 سنچریاں اسکور کی گئیں، انفرادی سطح پر خیبرپختونخوا کے کامران غلام ہیں، جنہوں نے آج کے میچ میں ناردرن کے خلاف 110 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی، جو ایونٹ کا اب تک کا سب سے بڑا انفرادی اننگز ہے۔

بابراعظم نے ایونٹ میں 105 اور شرجیل خان نے 101رنز کی باری کھیلی جبکہ حیدر علی نے 91 اور شعیب ملک نے 85 رنز بنائے۔

ایونٹ میں شاہنواز دھانی نے 12 رنز دے کر 4 وکٹیں لیں اور ایونٹ میں بہترین پرفارمنس کا مظاہرہ کیا، دوسرے نمبر پر حسن علی رہے جنہوں نے 24 رنز کے عوض 4 کھلاڑیوں کو پویلین بھیجا۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید