Muhammad Saeed Azhar - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
منگل یکم ذیقعدہ 1438ھ 25 جولائی 2017ء
محمد سعید اظہر
July 19, 2017
استعفیٰ، جاوید ہاشمی اور مقدر

سوال اخلاص کا نہیں اطلاق کا ہے، سینکڑوں نہیں ہزاروں والدین اپنی اولاد کو اپنے بے پناہ متشدد رویوں سے برباد کر دیتے ہیں۔ تربیت کے نام پر نہایت خلوص سے اولاد ان کی کم علمی اور ذہنی اندھے پن کی بھینٹ چڑھ جاتی ہے، چنانچہ سوال اخلاص کا نہیں اطلاق کا ہے اور اطلاق کی رو سے پاکستان کے گزرے تقریباً 70برسوں میں منتخب وزرائے اعظم اور منتخب...
July 12, 2017
پانچ؍ جولائی 1977اور نواز شریف کا ام الجرائم

5؍ جولائی 1977اور نواز شریف کا ’’اُم الجرائم‘‘ پر گفتگو کی تکمیل کرتے ہیں۔ گزرے ہفتے کے ’’چیلنج‘‘ میں اس عنوان سے بات یہاں پر ادھوری چھوڑی گئی تھی۔ اس کالم میں برادر عزیز نے ایسے اعتراضات اٹھائے جن کے ’’اعصابی خلیے‘‘ دلیل کے استرداد کا شکار ہیں۔ آپ نے اپنی اس تحریر کے آغاز میں لکھا:’’میاں صاحب! قسمت کے دھنی ہیں۔ یہ معجزے سے...
July 05, 2017
جولائی 5' 1977اور نوازشریف کا ام الجرائم

5جولائی 1977!آج اس تاریخ کی 40ویں برسی ہے۔ 40ویں برسی کا ایک نمایاں اور مضبوط ترین استعارہ 10جولائی 2017ہے جب عدالت ِ عظمیٰ پاکستان کی قائم کردہ جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم نے منتخب وزیراعظم کے تناظر میں متعدد مختلف ایشوز پر اپنی حتمی تفتیشی رپورٹ سپریم کورٹ کی خدمت میں پیش کرنی ہے۔ یہ منتخب وزیراعظم جناب نواز شریف ہیں جنہیں چندروزقبل ایک...
June 21, 2017
بی بی شہید کی یاد، اعتراف اور احترام میں!

آج 21؍جون 2017ء، بی بی شہید کی 64 ویں سالگرہ کا دن ہے، ان کی یاد، اعتراف اور احترام میں ایک گفتگو! پہلے اعجاز رضوی مرحوم کی ایک نظم مطالعہ کرتے جائیں! ---oتیز پیجرو رُکے، تو تیری ایک جھلک کے شیریں پل کو، آنکھوں کی کالک میں گھولیں، میلے کپڑوں والے بالک، اِک دوجے کا ہاتھ پکڑ کے دوڑتے جائیں، O---oتیرے سنگ دریدہ دامن، الجھے بالوں والی مائیں،...
June 14, 2017
اک تصویر کے سامنے آنے پر

’’اک تصویر کے سامنے آنے پر‘‘ کے عنوان سے گزرے کالم ’’چیلنج‘‘ میں جاری گفتگو کی تکمیل کرتے ہیں..... عرض کیا تھا، بی بی شہید کے صاحبزادے بلاول بھٹو نے کہ پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بھی ہیں، جے آئی ٹی کے سامنے حسین نواز کی پیشیوں اورجوڈیشل اکیڈمی کے درو دیوار سے باہر آنے والی تصویر جیسے واقعات پر کہا ’’تھوڑی سی تکلیف سے...
June 07, 2017
اِک تصویر کے سامنے آنے پر!

نجی ٹیلی وژن چینل کے پروگرام میں پاکستان کے معتدل ترین تجزیہ نگار جناب مجیب الرحمٰن شامی کی گفتگو کے ایک موضوع کا اختتامیہ اس مفہوم پر مشتمل تھا۔ ’’تفتیش بجا لیکن تفتیش کے نام پر تذلیل کا حق آپ کو کس نے دیا؟‘‘ موضوع تھا جوڈیشل اکیڈمی کی کرسی پر بیٹھے حسین نواز کی تصویر منظر عام پر آ جانے کا، آپ اسے ہدف بنائی گئی منتخب حکومت کے...
May 31, 2017
بھٹو، عالم اسلام، جمہوریت اور زرداری

’’چیلنج‘‘ کے نام ایک مستقل قاری محمد ارشاد احمد کا خط ملاحظہ فرمائیے، لکھتے ہیں!’’عرب اسلامی کانفرنس میں امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ ایران کو تنہا کیا جائے تو پاکستان کے سابق وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو بہت یاد آئے؟۔ اس لئے کہ ذوالفقار علی بھٹو عالم اسلام اور پاکستان کو مضبوط دیکھنا چاہتے تھے۔ذوالفقار علی بھٹو نے...
May 24, 2017
فیروز خان نون سے گوادر جمخانہ تک !

پاکستان پیپلز پارٹی کے تاریخ ساز دانشور طارق خورشید نے بلوچستان کے حوالے سے ایک مجلس آرائی میں شرکت کی دعوت دی، پاکستان کا ذرہ ذرہ قلب و جاں کا نغمہ اس کی دھرتی میں اپنی ذات کی ساری آرزوئیں اور خوشبوئیں سمٹے ہوئے ہے، معلوم نہیں جب کبھی بھی اور کہیں سے بھی ’’بلوچستان‘‘ کا کسی بھی نوعیت کا کوئی بھی سندیسہ ملے ایک وجدانی پیغام...
May 18, 2017
قومی جمہوری تسلسل کی منطقی طاقت

مملکت خداداد پاکستان کا قومی سفر آئینی بنیادوں پر ارتقا پذیر ہے۔ قومی خوش قسمتی کے اس واقعہ کو بلا کسی ذہنی کومپلیکس کے تسلیم کیا جانا چاہئے، کسی کو شکست دینے کے لئے میدان سیاست کو آزمائش میں ڈالنا روٹین کا معاملہ ہے مگر ملک کو ہی دائو پر لگا دینا یقیناً عملی حب الوطنی نہیں، بہرحال موجود تلخ لمحے کے مطابق ہو یہی رہا ہے، انٹر...
May 10, 2017
پیپلز پارٹی۔ کیا لوگ اندھے ہیں؟

پی پی پی کے تناظر میں گفتگو یہاں پر تھی:’’لیکن بات کیسے بگڑی؟ وہی ون ملین ڈالر سوال، سو بات ایسے بگڑی، سنو، ایک جانب پیپلز پارٹی کی قیادت اپنے فلسفہ عوام کی پاسبان بنی ہوئی تھی، دوسری جانب اسی ایوان صدر کے ملاقاتی، جی ہاں صرف ملاقاتی، وفاقی محکموں کے افسروں سے کہتے! ’’چالیس لاکھ کے ماہانہ اشتہارات دیتے ہو یا نہیں؟ بات بگڑی اس...
May 03, 2017
پیپلز پارٹی، کیا لوگ اندھے ہیں؟

پاکستان کے آئندہ متوقع قومی انتخابات کے انعقاد میں تقریباً ایک برس باقی رہ گیا ہے، قومی سیاست کی سرگرمیوں میں اجتماعی تیزی اور شدت کے معمولات بڑھنے کو انتخابی تیاریوں کی شروعات ہی سمجھنا چاہئے۔ جمہوریت کے تسلسل میں پاکستان کی قومی یکجہتی اور جغرافیائی بقا پوشیدہ ہے، ہمارے ملک کے ماضی نے اس سچائی کو ثابت کر دیا، جن لوگوں کے...
April 26, 2017
’’منتخب وزیراعظم ہرگز مستعفی نہ ہوں‘‘

یہ پاکستان وہ نہیں جس نے 14اور15اگست کی شب اترتے ’’تہجدّی لمحوں‘‘ میں جنم لیا تھا، یہ اس کا آدھا حصہ ہے جسے ہم نے ’’پاکستان‘‘ کی حیثیت سے قبول کرلیا، جو جدا ہوا اس نے خود کو بنگلہ دیش کے نام سے معنون کیا۔قومی سطح پر سلیمان کھوکھر جیسے تصدیق شدہ سیاسی ورکر کو آج بھی ’’ڈھاکہ کی پٹ سن، سلہٹ کی چائے کے باغات اور کرنافلی کے کاغذ کی...
April 19, 2017
’’ڈرو اُس وقت سے‘‘

وحشت، بربریت، سفاکیت، جنون، سنگدلی، چار افراد کے قتل میں یہ ناقابل قبول اور ننگِ ضمیر و قلب عناصر پوری طرح کارفرما ہیں، کسی متوازن مزاج اور درست دماغ فرد کو اس زمینی حقیقت سے انکار نہیں، البتہ ہو سکتا ہے انسانی زندگی میں ایسے افعال نے بھی جنم لیا ہو جن کا تعلق تذکرہ شدہ مندرجہ بالا شقی القلب کیفیات کے وقت صرف ذہنی برہنگی اور اپنے...
April 12, 2017
یوم دستور’’گیم لگ چکی، منتخب وزیراعظم ٹارگٹ ہے!‘‘

10اپریل 2017کو قومی سطح پر ’’یوم دستور 1973ء‘‘ منایا گیا۔ قومی اخبارات کے خصوصی ایڈیشنوں نے آئینی جدوجہد کی تاریخی عظمت سے روشناس کرایا، اعتراف کیا، اہل اقتدار و فکر نے اس حوالے سے ان تخصیصی اشاعتوں میں اپنے خیالات قلمبند کئے۔ سینیٹ کے چیئرمین میاں رضا ربانی قومی آئینی سفر کی عملی علامت ہے، چیئرمین نے صبر اور انتظار کے ساتھ...