Muhammad Saeed Azhar - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
منگل28؍ ربیع الثانی 1439ھ 16 ؍ جنوری2018ء
محمد سعید اظہر
January 10, 2018
اصغر خان کرگس کا جہاں اور ہے شاہیں کاجہاں اور

پاکستان فضائیہ کے سربراہ ایئر مارشل (ر) اصغر خان 5جنوری 2018ء کو دنیا سے رخصت ہو گئے، انہوں نے با مقصد، طاقتور اور متاثر کن زندگی گزاری، افواج پاکستان کے ایئر مارشل (ر) نور خاں کی طرح ایئر مارشل (ر) اصغر خان کو پاکستانی قوم نے سر آنکھوں پہ بٹھایا، دونوں پہ بلا کسی تفریق و تقسیم کے محبت اور احترام کے پھول نچھاور کئے، دونوں نے پاک فضائیہ...
January 06, 2018
نئے سال کی آمد۔ خاموشیوں کی تعداد زیادہ ہے

-oنئے سال کی مبارک باد کے بعد، 2017ء سمیت گزرے برسوں کی یادوں اور واقعات میں خاموشیوں کے لمحات کی تعداد بھی کم نہیں، دنیا اپنے قانون کے مطابق آگے ہی بڑھی ہے، لیکن انسانی سفر میں دکھوں کی تعداد کم ہونے میں نہیں آ رہی، شاید اسے ایسا ہی بنایا گیا ہے۔ -oمثلاً دو منٹ کی خاموشی بشمول پاکستان سارے عالم کے ان مظلوموں، بے کسوں، بے گناہوں،...
January 03, 2018
وقت آپ کی گھات میں ہے

پاکستان کے قومی حالات و واقعات تاریخی منجدھار میں جا اترے ہیں۔ شہباز شریف متوقع وزیراعظم پاکستان منتخب ہوئے ہیں یا نہیں؟ 7؍ جنوری 2018کے بعد سانحہ ماڈل ٹائون کے حوالے سے منعقدہ کل جماعتی کانفرنس کے مطالبے پر وزیر اعلیٰ پنجاب اور وزیر قانون مستعفی ہوتے ہیں یا نہیں؟ سابق صدر مملکت آصف علی زرداری نے نومبر 2017کے آخر سے لے کر دسمبر...
December 30, 2017
شریف برادران سے خواجہ سعد رفیق تک

ثبات ایک تغیر کو ہے زمانے میں!زندگی ہر لمحے خطرے میں ہے، یہ اقبالؒ کا قول ہے، دنیا کا کوئی شخص اگلے سانس بارے پیش گوئی نہیں کرسکتا، اس لئے ’’زندگی ہر لمحے خطرے میں ہے‘‘ کی صداقت پر سوال نہیں اٹھنا چاہئے نہ اٹھانا چاہئے، پاکستان کی سیاست بھی اس دائرے سے باہر نہیں رکھی جاسکتی، آخر سیاست تو زندگی کا متحرک ترین تقاضا ہے!اب کوئی چاہے...
December 27, 2017
بے نظیر زندگی، بے نظیر شہادت

-oقائداعظمؒ، بانی پاکستان کے ایام بیماری سے لے کر ایمبولینس تک کی کہانی؟ تاریخ سے پوچھیں! -oمادر ملت محترمہ فاطمہ جناح کی موت پر اٹھائے گئے یا اٹھنے والے سوال؟ تاریخ سے پوچھیں!-oلیاقت علی خان کے قتل کے اصل کردار؟ تاریخ سے پوچھیں!-oگورنر جنرل غلام محمد مرحوم کے اسمبلی توڑنے، جسٹس (ر) منیر کے اس غیر آئینی اقدام کو جائز قرار دینے،...
December 23, 2017
سید مودودی سے ذوالفقار علی بھٹو تک

غالباً 21یا 22مارچ 2017ہمارے اخبار ’’جنگ‘‘ لاہور کے صفحہ 2کی ایک خبر پر نظر پڑی پھر وہیں پر ٹک گئی۔ خبرتھی ’’مولانامودودی کے گھر کی 70برس پرانی ٹیلیفون لائن منقطع کردی گئی اور تفصیل کے مطابق تاہم اس حوالے سے کوئی معلومات حاصل نہیں ہوسکیں کہ ٹیلی فون لائن منقطع کرنے کی وجہ کیا تھی۔ واضح رہے یہ ٹیلیفون مولانا مودودی کے نام پر 70سال سے...
December 20, 2017
عزت مآب چیف جسٹس آف پاکستان کی خدمت میں

عزت مآب چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کے خطاب نے پاکستانیوں کی زندگیوں میں پوشیدہ ہلچل کو نمایاں کر دیا، عدل کے حصول میں طویل مسافتوں اور دلدلوں کی یادوں نے انہیں سیمابی حد تک اپنی محرومیوں، اپنی بے بسیوں اور اپنی بربادیوں کی داستانیں یاد دلا دیں، چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کے بیان کردہ حقائق سے ان کے بے شمار زخم...
December 17, 2017
بھٹو صاحب اور ظہور الٰہی، ایاز صادق اور ’’نامعلوم‘‘

ایاز صادق صاحب، اسپیکر پاکستان قومی اسمبلی اسلام آباد سے پہلے ذوالفقار علی بھٹو کے ’’متنازع مقدمۂ قتل‘‘ کے ایک تاریخی واقعہ کا تذکرہ کرتے ہیں۔ الم کی یہ تاریخ جاری ہے۔ جب تک اس کی قبر پہ جاکر ذمہ داران معافی نہیںمانگتے!تفصیل ایک کتاب سے مستعار لی گئی ہے۔ ’’بھٹو صاحب کے بارے میں آپ کوئی مثبت بات کہیں یامنفی برسوں بعد میں ایک...
December 13, 2017
نواز شریف۔چار ماہ 14دن کا سیاسی میزانیہ

28؍ جولائی 2017ء کو پاکستان کے منتخب وزیراعظم محمد نواز شریف کو عدالت عظمیٰ پاکستان نے ’’نااہل‘‘ قرار دے دیا، جولائی 2017کی اس تاریخ کے بعد انہیں ’’سابق نا اہل وزیراعظم‘‘ لکھا اور بولا جانے لگا، ’’آئین کی بالادستی، ووٹ کی حرمت اور جمہوری تسلسل‘‘ کے قائل کنندگان البتہ ان کے لئے پاکستان کے ’’سابق معزول منتخب وزیراعظم‘‘ کا...
December 06, 2017
ریاستی رٹ اور جمہوری تسلسل

پاکستان کی قومی سیاست عملاً دو گروہوں میں تقسیم ہے، قومی سیاسی تقسیم کی یہ اصولی پوزیشن 1958، اکتوبر میں منتخب حکومت پر ایوب خانی شب خون کے بعد وجود پذیر ہو گئی تھی۔ آپ اسے ایک اور طرح بھی بیان کر سکتے ہیں، یہ کہ ’’آئین کی بالادستی، ووٹ کی حرمت اور جمہوری تسلسل‘‘ کے قوی نصب العین کے علمبردار اور ’’آئین کی زیر دستی، ووٹ کی بے...
November 29, 2017
دھرنا۔۔۔ اب تو وقت کا گجر بجے گا

اپنے مذہبی دھرنے کا بنیادی جسمانی دھڑ اٹھا لیا گیا تاہم اس دھڑ کے ایک حصے کے طور پر 28نومبر 2017کی صبح تک لاہور میں دھرنا جاری ہے۔ لیڈروں سے لے کر ان کے پیروکاروں تک، سب اپنی اپنی ذہنی اپروچ کی متقاضی زبان کے سائبان تھے۔ اپنی طبائع میں ڈھلے ہوئے کلام سے کام لے رہے ہیں، پاکستان کے عوام کی اکثریت اس کلام کے معاملے میں اپنی اجتماعی دانش...
November 25, 2017
فیض میلے سے ’’حرف ِ انکار‘‘ تک

فیض احمد فیضؔ کی یاد میں یہ تیسرا فیض انٹرنیشنل فیسٹیول میلہ تھا۔ 17نومبر 2017کو آغاز ہوا، 19نومبر کی شام اختتام پذیر ہو گیا۔ الحمرا آرٹس کونسل کے درودیوار فیض ؔصاحب کے مہک آور تذکرے سے مہکتے رہے۔ دل کے تاروں کی بجتی آوازوں نے تشنج کے ماحول میں سکھ کا احساس دلایا۔ نہ جانے کہاں سے ایسا لگا جیسے ہر لفظ شائستگی، تحمل اور تہذیب کے...
November 22, 2017
نواز شریف، کیا بیانئے پر قائم رہیں گے؟

’’آئین کی بالادستی، ووٹ کی حرمت اور جمہوری تسلسل‘‘ کیا نواز شریف اس قومی بیانئے پر مستقل بالذات قیام پذیر رہیں گے؟ صحافتی دانش وروں میں سے ایک صاحب نظر کے بعض اشاریے، اس معاملے میں شاید کوئی استعاراتی رہنمائی کر سکتے ہیں مثلاً (1) اب پورے شریف خاندان کو نشان عبرت بنانے کی منصوبہ بندی ہے (2) کیا نواز شریف کا اگست 1977ہونے والا ہے؟...
November 18, 2017
آغا شورش کاشمیری کی یاد میں

آغا شورش کاشمیری کی یاد میں 16نومبر 2017 بعد از دوپہر لاہور پریس کلب کے زیر اہتمام سیمینار منعقد ہوا ۔ کلب کے متحرک صدر شہباز میاں اور کلب کے تاحیات متحرک رکن علامہ صدیق اظہر جیسے سینئر دانشوروں اور اخبار نویسوں کی کاوشیں اس مجلس مذاکرہ کی روح رواں تھیں۔ صدارت گورنر پنجاب ملک رفیق رجوانہ نے کی۔ ’’صدارت شہباز میاں نے کی‘‘ اس طرح...