’پری اسکول‘ بچوں کیلئے تفریحی سائنسی سرگرمیاں

January 16, 2022

بچے کی سائنس سے رغبت پیدا کرنا نہایت مشکل کام معلوم ہوتا ہے۔ تاہم، مختلف تفریحی سرگرمیوں کے ذریعے بچوں کی سائنس میں دلچسپی پیدا کی جاسکتی ہے۔ اگرچہ پری اسکول بچے جدید سائنسی تصورات کو نہیں سمجھ سکتے، پھر بھی آپ کو ان کی روزمرہ زندگی میں STEM اور STEAM کے تجربات کو شامل کرنا چاہیے۔

یہ سرگرمیاں آپ کے بچے کا تجسس بڑھائیں گی، آسان تفریح ​​فراہم کریں گی اور اسے دنیا کے کاموں کے بارے میں سکھائیں گی۔ کچھ سرگرمیوں میں حسی کھیل اور عمدہ موٹر مہارت کی نشوونما کا اضافی بونس ہوتا ہے۔ چاہے آپ کا پری اسکول بچہ فطری طور پر متجسس ہو یا سیکھنے میں ہچکچاہٹ کا مظاہرہ کرتا ہو،آپ گھر پر بچے کے ساتھ سائنس کی چند تفریحی سرگرمیاں انجام دے سکتے ہیں۔

دودھ کی پینٹنگ

سائنس کا یہ تجربہ بچوں کو حیران کر دے گا، چاہے وہ خود اس تجربے میں شامل ہوں یا صرف دیکھ رہے ہوں۔ ایک پلیٹ یا پیالے کو دودھ سے بھریں (زیادہ چکنائی بہترین کام کرتی ہے) اور اس میں کھانے کے رنگ کے چند قطرے ڈالیں۔ اس کے بعد، برتن دھونے کے صابن میں روئی یا ٹوتھ پک ڈبوئیں، پھر اپنے بچے کو رنگین دودھ کے گرد اسے گھمانے کا کہیں۔

یہ سنگ مرمر کا تاثر دے گا، جو بچے کی دلچسپی کا باعث بنے گا۔ زیادہ مکس کرنے سے گریز کریں، ورنہ یہ بھورے رنگ کا ہو جائے گا۔ آپ بچے کو اس کی مدد سے خوبصورت پینٹنگ بنانے کی ترغیب بھی دے سکتے ہیں۔ بچے کی جانب سے بنائی جانے والی پینٹنگ کو خشک ہونے تک چھوڑنا ضروری ہے۔

تیل اور پانی

اپنے بچے کو سائنسی تجربے کے ذریعے سکھائیں کہ تیل اور پانی آپس میں نہیں ملتے۔ اس تجربے کے لیے کھانے کے تیل میں تھوڑا سا کھانے کا رنگ شامل کریں۔ پھر اسے ایک گلاس پانی میں ڈال دیں۔ تیل (جس کی کثافت پانی سے کم ہے) گلاس میں اُوپری سطح پر آجائےگا اور کھانے کا رنگ (جو پانی کی بنیاد کی وجہ سے تیل سے زیادہ کثیف ہے) نیچے گرنے لگے گا جیسے ’آتش بازی‘ ہورہی ہو۔ آپ کا بچہ اس کے ذریعے کثافت کے اثرات کو اپنی آنکھوں سے دیکھے گا۔

پوشیدہ سیاہی

اس انوکھے سائنسی تجربے سے آپ کا بچہ سیکرٹ ایجنٹ کی حیثیت حاصل کرلے گا۔ اس کے لیے ایک پیالے میں ایک چمچ پانی کے ساتھ لیموں کا رس نچوڑ لیں۔ آپ کا بچہ اپنے پینٹ برش یا روئی کو اس محلول میں ڈبو کر کاغذ پر کچھ تصاویر بناسکتا ہے۔ اس عمل کو کرتے وقت اور خشک ہونے کے بعد بظاہر کچھ نظر نہیں آئے گا مگر جیسے ہی اسے سورج کی روشنی، لائٹ بلب کے قریب، یا استری کے نیچے رکھا جائے گا تو یہ ظاہر ہو جائے گا۔ دراصل لیموں کا رس گرم ہونے پر آکسیڈیشن سے بھورا ہو جاتا ہے۔

ہوم میڈ سلائم

بچے گھر میں سلائم بنانے میں بےحد دلچسپی لیتے ہیں۔ ویسے تو سلائم بنانے کے بہت سے طریقے آن لائن مل سکتے ہیں، لیکن ایک مشہور نسخہ یہ ہے کہ گوند کی ایک بوتل (Glue)، آدھا چائے کا چمچ بیکنگ سوڈا اور ڈیڑھ کھانے کا چمچ کانٹیکٹ سلوشن کو یکجا کیا جائے۔ اگر چاہیں تو اس میں گلیٹر، کھانے کا رنگ وغیرہ شامل کرسکتے ہیں۔

لچک دارسلائم بنانے کے لیے اس میں گرم پانی ڈالیں جبکہ خشک سلائم کے لیے اس میں کارن اسٹارچ مکس کریں۔ ایک بار جب یہ تیار ہو جائے تو اپنے بچے کو اس سے مختلف چیزیں تخلیق کرنے کی ترغیب دیں۔ وہ اسے چپٹا کرسکتا ہے، رول کرسکتا ہے، پھیلا سکتا ہے اور اس کی گیند بناسکتا ہے۔ سلائم سے کھیلنا ایک تفریحی حسی اور ساختی تجربہ ہوتا ہے، جو موٹر کی مہارتوں کو فروغ دینے میں بھی مدد کرتا ہے۔

سکّے کی صفائی

اگرچہ چھوٹے بچے کیمیائی رد عمل کو نہیں سمجھتے لیکن ان کیلئے بصری ثبوت دلکش ہوتا ہے۔ اس تجربے میں گندے سکّوں کو عام گھریلو اشیا سے صاف کرنا شامل ہے۔ اس کے لیے ایک گلاس میں سرکہ اور تقریباً ایک چائے کا چمچ نمک ڈالیں، پھر یکجا کرنے کے لیے ہلائیں۔ اس کے بعد اپنے بچے کو گندے سکّے اس محلول میںڈال کر چند منٹوں کے لیے ہلانے کاکہیں۔ پھر سکّوں کو نکال کر انہیں دھوئیں، بچہ ان کی نئی چمکدار سطح دیکھ کر حیران رہ جائے گا۔

کثافت ڈوب یا تیرنا؟

ایک بڑی بالٹی یا ٹب میں پانی بھریں۔ پھر مختلف کثافتوں (Densities)کی حامل اشیا لیں جیسے کہ لکڑی کا ٹکڑا، پتھر، سکّے، واٹر پروف کھلونے، پتے، ماربل، اسفنج اور ربڑ بینڈ وغیرہ۔ اپنے بچے سے ہر ایک چیز کو پانی میں ڈالنے کا کہیں تاکہ وہ یہ مشاہدہ کرسکے کہ کونسی شے ڈوبتی اور کونسی تیرتی ہے۔ یہ سرگرمی اُچھال اور کثافت کے تصورات متعارف کراتی ہے۔ حسی اور پانی کا کھیل آپ کے بچے کو کافی دیر تک تفریح ​​فراہم کرے گا۔

موسیقی بنانا

بچوں کے لیے سائنس کی اس سرگرمی میں موسیقی بنانا شامل ہے۔ اسے کرنے کا طریقہ یہ ہے چند گلاس جمع کرکے انہیں مختلف مقدار میں پانی سے بھردیں۔ اب اپنے بچے کو چمچ یا کسی دوسری شے کو گلاس پر لگانے کا کہیں تاکہ کچھ دلکش دھنیں پیدا ہوں۔ بچہ جلد ہی جان لے گا کہ پانی کے ذریعے چلنے والی آواز کی لہروں کی بدولت ہر گلاس ایک مختلف آواز دیتا ہے۔

لکڑی اور کپ

یہ سائنسی کھیل چھوٹے بچوں کو خوب تفریح فراہم کرتا ہے۔ اسے بنانے کے لیے پلاسٹک کے تین کپ لیں اور انھیں ایک لمبی لکڑی کے آخری سرے پر تھوڑے سے فاصلےسے چپکادیں۔ جب یہ خشک ہوجائے تو ایک ٹین کے ڈبّے کو لکڑی کے درمیان ربڑ بینڈ کی مدد سے جوڑ دیں۔

اس کے بعد پلاسٹک کی گیندیں ان کپ میں ڈالیں اور بچے کو لکڑی کے دوسرے سرے پر پاؤں رکھنے کا کہیں۔ جیسے ہی لکڑی پر وزن پڑے گا تو دوسری جانب گیندیں اُچھل کر کمرے میں بکھر جائیں گی۔ بچہ مختلف اشیا اور مقدار کے ساتھ اس کھیل سے لطف اُٹھا سکتا ہے۔