• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سعودیہ سے ملنے والی رقم کا IMF سے تعلق نہیں، شوکت ترین


مشیر خزانہ شوکت ترین کا کہنا ہے کہ سعودی عرب سے ملنے والی رقم کا آئی ایم ایف سے تعلق نہیں، آئی ایم ایف سے معاہدے کے قریب پہنچ گئے ہیں، وہ بھی ایک دو دن میں طے ہوجائے گا۔

مشیر خزانہ شوکت ترین نے حماد اظہر کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرس میں بتایا کہ سعودی عرب سے گفتگو چل رہی تھی، معاہدے کے خدوخال اب طے ہوئے ہیں، وزیراعظم کے حالیہ دورۂ سعودی عرب میں سعودی حکام نے منظوری دی۔

شوکت ترین نے بتایا کہ ہم نے سعودی عرب سے3 ارب اسٹیٹ بینک میں ڈیپازٹ رکھنے کا کہا تھا، سعودی عرب نے 4اعشاریہ 2 ارب ڈالر کا پیکج دیا ہے، رقم ملنا ہمارے لیے مفید ہے، تیل کی قیمتوں سے لگ یہی رہا ہے کہ مہنگائی ہو رہی ہے۔

شوکت ترین نے کہا کہ سعودی عرب سے ملنے والی امداد کا آئی ایم ایف سے کوئی تعلق نہیں ہے، سعودی عرب سے پیسہ اور تیل انہی شرائط پر ملا جو پہلے تھیں۔

مشیر خزانہ نے کہا کہ آئی ایم ایف سے معاہدے کے قریب پہنچ گئے ہیں، مجھ سے یقین دہانی لے لیں، ایک آدھ چیز ہے جس پر ہماری بحث ہو رہی ہے، وہ بھی ایک دو دن میں طے ہوجائے گی، کچھ اور چیزیں ہیں جنہیں زیر بحث نہیں لانا چاہتے۔

انہوں نے کہا کہ میں جب واشنگٹن سے نکلا تھا تو جنرل ایگریمنٹ کرکے نکلا تھا، ایسے نہیں نکلا،میں واشنگٹن سے نیویارک آیا تھا، نیویارک سے واپس واشنگٹن گیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف سے معاہدہ ہوجائے گا اور مارکیٹ میں مثبت اثرات آئیں گے، وزیرِ خزانہ نے مزید کہا کہ قوت خرید کی تفصیلات کے مطابق ہم سستے ترین ملک ہیں۔

قومی خبریں سے مزید