• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کالعدم ٹی ایل پی نے اہلکاروں پر تشدد کیا یہ رویہ قابل قبول نہیں، قومی سلامتی کمیٹی



وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہونے والی قومی سلامتی کمیٹی اجلاس کا اعلامیہ جاری کردیا گيا، اعلامیہ میں کہا گيا ہے کہ ٹی ایل پی نے اہلکاروں پر تشدد کیا یہ رویہ قابل قبول نہیں، ریاست کسی قسم کے غیر آئینی اور بلاجواز مطالبات کو تسلیم نہیں کرے گی،ریاست آئین و قانون کے دائرہ کار میں رہ کر مذاکرات کرے گی۔

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کسی گروپ یا عناصر کو امن عامہ کی صورتحال بگاڑنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، کسی گروپ یا عناصر کو حکومت پر دباؤ ڈالنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

اجلاس میں وفاقی وزراء، مشیر قومی سلامتی، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی شریک تھے، جبکہ تینوں مسلح افواج کے سربراہان، ڈی جی آئی ایس آئی نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔

اعلامیے کے مطابق آئی بی اور ایف آئی اے، سینئر سول و عسکری حکام بھی اجلاس میں شریک تھے، کمیٹی کو ملک کی داخلی صورتحال اور ٹی ایل پی کے احتجاج پر بریفنگ دی گئی۔

اعلامیے کے مطابق اجلاس میں کالعدم ٹی ایل پی کے احتجاج کے دوران جان و مال کونقصان پہنچانے پر گہری تشویش کا اظہار کیا گیا۔

قومی خبریں سے مزید