• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
—فائل فوٹو

آرمی چیف کی تعیناتی کے معاملے پر وزیرِ اعظم شہباز شریف کی صدارت میں کابینہ و اتحادیوں کا اہم اجلاس وزیرِ اعظم ہاؤس اسلام آباد میں ہوا۔

وزیرِ اعظم ہاؤس میں وزیرِ اعظم شہباز شریف کی زیرِ صدارت منعقدہ اجلاس میں امین الحق، طارق بشیر چیمہ، مولانا اسعد محمود، شاہ زین بگٹی، اسرار ترین، رانا ثناء اللّٰہ، خواجہ آصف، عبدالقادر پٹیل، شیری رحمٰن، عون چوہدری، ملک شہادت، سینیٹر طلحہٰ محمود، ریاض پیرزادہ اور چوہدری سالک حسین شریک ہوئے۔

اجلاس کے دوران وزیرِ اعظم شہباز شریف نے کورونا سے علالت کے دوران تیمار داری، نیک تمناؤں اور دعاؤں پر شکریہ ادا کیا۔

وزیرِ اعظم نے سیلاب زدہ علاقوں میں متاثرین کے ریلیف و بحالی کےاقدامات پر وزیرِ خزانہ، وزیرِ تخفیفِ غربت و سماجی تحفظ، چیئرمین بینظیر انکم سپورٹ پروگرام، وزیرِ موسمیاتی تبدیلی، وزیرِ مواصلات، پاور منسٹر، این ڈی ایم اے اور تمام متعلقہ اداروں کو خراجِ تحسین پیش کیا۔

وزیرِ اعظم شہباز شریف نے مصر کے شہر شرم الشیخ میں منعقدہ سمٹ میں وزیرِ خارجہ، وزیرِ اطلاعات اور وزیرِ موسمیاتی تبدیلی کی کوششوں کو خصوصی طور پر سراہا۔

کابینہ نے وزیرِ اعظم کے سیکریٹری سید توقیر شاہ کی مرحومہ والدہ اور حالیہ واقعات میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کے شہید اہلکاروں کے لیے مغفرت کی دعا کی۔

وزیرِ اعظم نے گزشتہ روز بھی مشاورت کی

گزشتہ روز بھی اہم عسکری تقرریوں کے بارے میں وزیرِ اعظم شہباز شریف نے وزراء اور اتحادیوں سے صلاح مشورے کیے تھے۔

اس موقع پر اتحادیوں نے وزیرِ اعظم سے کہا کہ آپ پر مکمل اعتماد ہے، مشاورت کرنے پر شکریہ، ہر فیصلے میں آپ کے ساتھ ہیں۔

آصف زرداری، مولانا فضل الرحمٰن، چوہدری شجاعت، بلاول بھٹو زرداری، خالد مگسی، خالد مقبول صدیقی، اختر مینگل، آفتاب شیر پاؤ، شاہ زین بگٹی، شاہد خاقان عباسی، چوہدری سالک حسین، خرم دستگیر، عطاء تارڑ، مریم اورنگزیب اور پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ آرمی چیف کی تعیناتی آپ کا آئینی حق ہے۔

وزیرِ اعظم شہباز شریف کی زیرِ صدارت ہونے والے اجلاس کے دوران حکومتی اتحادیوں نے وزیرِ اعظم پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم ہر فیصلے میں آپ کے ساتھ کھڑے ہیں۔

اس حوالے سے وزیرِ دفاع خواجہ آصف نے بتایا تھا کہ سمری پر فیصلہ آج ہو جائے گا۔

قومی خبریں سے مزید