آپ آف لائن ہیں
بدھ8؍ محرم الحرام1440ھ 19؍ستمبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

مختلف مراحل سے گزر کر کراچی پہنچنے والے مویشیوں کے تاجروں کو لوٹا جا رہا ہے۔ سپر اور نیشنل ہائی وے پر بھی مختلف ٹیکسز کی مد میں بھاری رقوم وصول کی جا رہی ہیں۔

ملیر کی منڈی میں داخلہ کیلئے فی گائے ڈھائی سو روپے اوربکراو دنبہ 120 روپے ٹیکس عائدکیا گیا ہے ۔

بکرا پیڑھی میں داخلہ کیلئے ٹرالر پر 220 روپے کی الگ فیس عائد کردی گئی۔کار کیلئے 30 ،مزدا 40 جبکہ بس اور ٹرک پر110 روپے اینٹری فیس بھی عائدکی گئی ہے ۔

رسیدیں ڈسٹرکٹ میونسپل کمیٹی ملیر کے نام پرجاری کی جارہی ہیں جس کے لئے بینرز بھی لگا دئیے گئے۔

ڈیری اینڈ کیٹل فارمرز ایسوسی ایشن ملیر نے بکرا پیڑی میں ٹیکس وصولی پر احتجاج کیا ۔ 

ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ ڈی ایم سی ملیر کے بھاری ٹیکس مرے کو مارے شاہ مدار کے مترادف ہیں۔

صدر شاکر عمر گجر کا کہنا ہے کہ بیوپاریوں سے بھاری ٹیکسز کی وصولی کا اثر براہ راست شہریوں پر پڑے گا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں