آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ4؍ربیع الثانی 1440ھ 12؍دسمبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

یمن میں امن کیلئے حکومتی فورسز اور باغیوں کو ہنگامی بنیادوں پر جنگ بندی کرنا ہوگی،اقوام متحدہ

اسٹاک ہوم(مانیٹرنگ سیل)اقوام متحدہ نے تنبیہ کیا ہے کہ یمن میں امن کیلئے حکومتی فورسز اور باغیوں کو ہنگامی بنیادوں پر جنگ بندی کرنا ہوگی، فریقین آگ سے کھیل رہے ہیں جس کے نتائج نہایت ہولناک ہیں، اس آگ کو روکنا ہوگا ورنہ کئی اور علاقے اس کی زد میں آجائیں گے، بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے خصوصی مندوب مارٹن گرفتھس نے سویڈن میں جاری امن مذاکرات کے ابتدائیہ میں فریقین کو جنگ بندی کے لیے ہنگامی بنیادوں پراقدامات کرنے پر زور دیا ہے۔اقوام متحدہ کے وفد نے وارننگ دی ہے کہ یمن کا مستقبل حکومتی فورسز اور حوثی باغیوں کے ہاتھوں میں ہے، اگر مکمل تباہی سے بچنا ہے تو فریقین کو اب 3 سال سے جاری خانہ جنگی کو ختم کرنا ہوگا۔اقوام متحدہ کے وفد کا مزید کہنا تھا کہ فریقین آگ سے کھیل رہے ہیں جس کے نتائج نہایت ہولناک ہیں اور اس کے اثرات پورے خطے میں مرتب ہورہے ہیں۔ اس آگ کو روکنا ہوگا ورنہ کئی اور علاقے اس کی زد میں آجائیں گے۔سویڈن میں اقوام متحدہ کے زیر

انتظام یمن امن مذاکرات جاری ہے، یہ دوسرا موقع ہے جب حکومتی حکام اور حوثی باغی ایک پلیٹ فارم پر جنگ بندی کے لیے مذاکرات کی میز پر بیٹھے ہیں اور قیدیوں کے تبادلے پر اتفاق رائے کر لیا گیا ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں