آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار 17؍ذیقعد 1440ھ21؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے پراپرٹی کی خریدوفروخت پر ٹیکسوں میں اضافے کی تجویزمسترد کر دی۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس ہوا جس میں ایف بی آر کو ہدایت کی گئی کہ ٹیکسوں کی شرح کو کم کرے۔

کمیٹی نے فاٹا اور پاٹا کو سیلز ٹیکس سے استثنیٰ دینے کی سفارش بھی مؤخر کردی ہے جبکہ پلانٹ اور مشینری پر کراس چیک کے ذریعے ان پٹ کلیمز دینے کی سفارش منظور کر لی گئی ہے۔

ایف بی آر ذرائع کا کہنا ہے کہ خزانہ کمیٹی نے تحفے تحائف پر ٹیکسوں کی تجاویز منظور کر لیں، جو گفٹ رشتہ دار سے نہیں ملے گا اس پر ٹیکس لگانے کی تجویز ہے، جبکہ بہن، بھائی، ماں، باپ، بیٹا،بیٹی سے گفٹ لینے پر کوئی ٹیکس نہیں ہو گا۔

ایف بی آر کا مزید کہنا ہے کہ ٹیکس چھوٹ کے اختیارات پارلیمنٹ کو دے دیے گئے ہیں۔

سینیٹ کی خزانہ کمیٹی نے نان ریزیڈنٹس پر ٹیکس کی تجویز منظور کر لی۔

اس حوالے سے ایف بی آرنے بتایا ہے کہ سال میں 90 روز زائد پاکستان میں رہنے والا نان ریزیڈنٹ کہلائے گا، نان ریذیڈنٹس کو 4 سال میں 365 روز پاکستان میں قیام دکھانا ہو گا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں