آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل18؍ذوالحجہ 1440ھ20؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سعودی عرب میں ڈائرکٹر جنرل پاکستان حج مشن ڈاکٹر ساجد یوسفانی نے کہا ہے کہ حج کوٹے میں اضافے کے بعد اس سال 2لاکھ پاکستانی عازمین فریضئہ حج ادا کرینگے۔

انکی رہائش اور تینوں وقت کھانے پینے کی فراہمی کے علاوہ حرم شریف آمدورفت کیلئے 24گھنٹے بس شٹل سروس فراہم کی جائیگی۔

وہ جدہ میں جنگ سے خصوصی گفتگو کررہے تھے، ڈائرکٹر جنرل حج نے مزید کہا کہ 214 حجاج کا پہلا قافلہ 4 جولائی کی صبح لاہور سے مدینہ منورہ کے پرنس محمد بن عبدالعزیز انٹرنیشنل ایئرپورٹ پہنچے گا۔ جبکہ دوسرا قافلہ 5 جولائی کو 393 عازمین کو لیکر کنگ عبدالعزیز انٹرنیشنل ایئرپورٹ جدہ پہنچے گا، جہاں امیگریشن، کسٹم کلیئرنس اور دیگر سہولتوں کی فراہمی کا انتظام کرلیا گیا ہے۔

ڈاکٹر یوسفانی نے بتایا کہ  اس سال روڈ ٹو مکہ کی سہولتیں بھی اسلام آباد سے آنے والے14800 عازمین کو ملیں گی، اس سسٹم کو آپریشنل کرنے کیلئے 50 سعودی ماہرین  پر مشتمل ایک ٹیم اسلام آبا پہنچی ہے تاکہ معاملات آسانی کے ساتھ چلتے رہیں۔

ڈاکٹر ساجد یوسفانی نے اس سے قبل روڈ ٹو مکہ کانفرنس اور دیگر اجلاسوں میں بھی شرکت کی، جہاں حج انتظامات کو حتمی شکل دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس مرتبہ 70 فیصد گزشتہ سال والی اور 30 فیصد نئی عمارتیں لی گئی ہیں، جن میں حجاج کیلئے کھا نے لئے میس اور حرم آنے جانے کیلئے نئی ایئرکنڈیشنڈ  بسوں کی سہولتیں دی جارہی ہیں۔

گزشتہ سال جن بلڈنگوں کی شکایت ملی تھی ان بلڈنگوں کو اس سال مسترد کیاگیا ہے، اس سال پاکستان سے 600خدام الحجاج معاونین کے طور پر آرہے ہیں جبکہ 180 ماہرین واسپشلسٹ ڈاکٹرز اور 360 پیرا میڈیکل اسٹاف پاکستان سے آرہے ہیں ۔

تاہم کسی بڑے مرض اور علاج کیلئے سعودی اسپتالوں کی سہولت بھی میسر ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ منیٰ میں جمرات کے قریب ہمارے 32 مکاتب الاٹ ہوئے ہیں، جبکہ 54000 پاکستانی حجاج کو مشاعر ٹرین کی سہولتیں بھی فراہم کی جائینگی۔

ڈاکٹر یوسفانی نے کہا کہ اس بار حج شدید گرم موسم میں ہے، لہذا حجاج اپنی صحت کا خاص خیال رکھیں، پانی اور مشروبات کا استعمال زیادہ رکھیں اور چھتری کا استعمال بھی کریں۔

مدینہ منورہ میں بھی اس مرتبہ مرکزی عمارتیں حاصل کی گئی ہیں جبکہ پاکستان ہاؤس کی عمارت میڈیکل اسٹاف، منیٰ اسپتال اور حج امور کیلئے وقف رہیگی۔

قومی خبریں سے مزید