آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ یکم رجب المرجب 1441ھ 26؍ فروری 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

گڈز ٹرانسپورٹ کی ہڑتال سے پورٹس پر کام ٹھپ ہو گیا، انجم نثار

گڈز ٹرانسپورٹ کی ہڑتال، پورٹس پر کام بند، مسئلے کو حل کرنا ضروری ہے، انجم نثار
وفاق ہائے ایوان صنعت وتجارت کے نو منتخب صدر انجم نثار

وفاق ہائے ایوان صنعت وتجارت کے نو منتخب صدر انجم نثار نے کہا ہے کہ گڈز ٹرانسپورٹ کی ہڑتال سے ہماری تمام پورٹس پر کام ٹھپ ہو گیا ہے، ہڑتال ختم کرانے کے لیے حکومت کو فوری ایکشن لینا چاہے، اس سے ملک کی صنعت کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے۔

ایک جانب ملکی ایکسپورٹ متاثر ہو رہی ہے تو دوسری جانب پھل فروٹ اور جلد خراب ہوجانے والی مصنوعات امپورٹ اور ایکسپورٹ کرنے والوں کو مالی نقصان کا سامنا ہے، ملک کو یومیہ کروڑوں روپے کا نقصان ہو رہا ہے۔ ان حالات میں ہم ہڑتال کے متحمل نہیں ہو سکتے۔

ان خیالات کا اظہار ایف پی سی سی آئی کے نومنتخب صدر نے جنگ سے بات چیت کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ ہڑتال سے بڑھتے ہوئے مسائل اور صنعتوں کی بندش کا خدشہ ہے، اسی وجہ سے انہوں نے وزیر اعظم عمران خان اور متعلقہ وزراء سے رابطہ کیا ہے، اور ان سے درخواست کی ہے کہ اس مسئلے کو مستقبل بنیادوں پر حل کیا جائے۔کیونکہ گذشتہ ایک سال سے یہ مسئلہ چل رہا ہے۔

ایک سوال پر ان کا کہنا تھا کہ تمام اسٹیک ہولڈرز کو ایک جگہ بٹھا کر اس کا حل نکالنا ہو گا، میرے خیال میں لوڈ کے مسئلے پر عدالتی فیصلے کو بتدریج نافذ ہو نا چاہے کیونکہ اگر فوری اس فیصلے پر عمل درآمد ہو گا تو بحران پیدا ہو جائے گا۔

انجم نثار نے کہا کہ فیصلے پر عمل کے لیے 2لاکھ ٹرک اور ٹرالر کی فوری ضرورت ہو گی اور اس کے لئے اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری درکار ہو گی، انہوں نے کہا کہ ہڑتال4 روز سے جاری ہے، جس سے پورٹس پر کنٹینرز کے انبار لگ گئے ہیں اور پورٹس پر کام ٹھپ ہو چکا ہے۔

اس وقت معیشت ہڑتالوں کی متحمل نہیں ہو سکتی، ہم نے حکومت سے اپیل کی ہے کہ باہمی مذاکرات سے جلد از جلد اس مسئلے کو حل کرایا جائے، ایف پی سی سی آئی اس سلسلے میں ثالث کا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔

تجارتی خبریں سے مزید