آپ آف لائن ہیں
اتوار13؍ذیقعد 1441ھ 5؍جولائی 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group


تمغۂ امتیاز حاصل کرنے والی پاکستانی اداکارہ مہوش حیات نے پاکستانی نژاد کینیڈین صحافی طارق فتح سے غلط ویڈیو شیئر کرنے پر اظہار  برہمی کیا ہے۔

طارق فتح نے ٹوئٹر پر ایک ویڈیو شیئر کی جس میں پولیو ورکر ایک گھر کے دروازے پر کھڑے ہیں اور ایک خاتون اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے سے انکار کر رہی ہیں اور دروازہ بند کر دیتی ہیں۔

کینیڈین صحافی نے یہ کِلپ شیئر کرتے ہوئے لکھاکہ ’پاکستانی خاتون نے بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے سے انکار کردیا اور پولیو ورکر  کے منہ پر دروازہ بند کر دیا۔‘

طارق فتح نے ویڈیو مین خاتون کے کہے گئے الفاظ بھی لکھےجو کچھ یوں ہیں ۔

’میں کبھی بھی اپنے بچوں کو یہ قطرے پلانے کی اجازت نہیں دوں گی۔ میرے بچے کبھی بھی یہ قطرے نہیں پیئں گے۔ ‘

اس ٹوئٹ کو ری ٹوئٹ کرتے ہوئے مہوش حیات نے طارق فتح کا پاکستان مخالف جھوٹ بے نقاب کردیا۔

یہ ویڈیو کلپ دراصل مہوش حیات کی فلم’ لوڈ ویڈنگ‘ کا ایک سین ہے جس میں مہوش حیات نے پولیو ورکر کا کردار ادا  کیا۔

لڑکیوں کے حقوق کی خیر سگالی سفیر مہوش حیات نے  اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ  ’برائے مہربانی کچھ بھی شیئر کرنے سے پہلے تصدیق کیا کریں۔

مہوش حیات نے صحافی کو یہ بھی بتادیا کہ یہ اُن کی فلم کا ایک سین ہے اور جو خاتون بچوں کی والدہ کا کردار نبھا رہی ہیں وہ بھی ایک اداکارہ ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ’فلم کے ذریعے ہم نے اس مسئلے پر شعور اجاگر کرنے کی کوشش کی ہے۔‘

آخر میں مہوش  نے یہ بھی لکھا کہ ’ اس بات کی بے حد خوشی ہے کہ ان کی پرفارمانس قائل کرنے میں کامیاب رہی ہے۔‘

سوشل میڈیا صارفین بھی طارق فتح کے اس غلط ٹوئٹ پر ٹرول کر رہے ہیں اور فلم دیکھنے کا مشورہ دے رہے ہیں۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید