آپ آف لائن ہیں
جمعہ18؍ربیع الثانی 1442ھ 4؍دسمبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

ایک ہی خاندان کے7 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے، سید مراد علی شاہ


وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ جس چیز کا ڈر تھا آج افسوس کے ساتھ وہی ہوگیا ہے، ایک ہی خاندان کے سات افراد میں کورونا وائرس ظاہر ہوا ہے۔

سید مراد علی شاہ نے اپنے ایک وڈیو بیان میں کہا ہے کہ ایک ہی خاندان کے سات افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے، ضلع وسطی کی کچی آبادی میں فیملی کا سربراہ باہر سے وائرس لےکر گھر گیا تھا جس کے نتیجے میں 1 سال کا بیٹا اور 6 سال کی بیٹی سمیت پورے خاندان میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔

سید مراد علی شاہ نے عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ کچی آبادی میں رہنے والے بہن بھائی راشن اورامداد ضرور لیں لیکن کورونا گھر نہ لےجائیں اور راشن یا امداد لیتے وقت ایک دوسرے سے فاصلہ ضرور اختیار کریں۔

انہوں نے کورونا وائرس سے متعلق تازہ صوتحال پر بات کرتے ہوئے بتایا کہ سندھ میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا کے 642 ٹیسٹ کیے گئے ہیں جن میں سے کورونا وائرس کے 92 کیسز سامنے آئے ہیں۔

سید مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ اس وقت سندھ میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 1128 ہے جبکہ سندھ میں 349 مریض صحتیاب ہوئے ہیں اور گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا سے ایک وفات سےاموات 21 ہوگئیں ہیں۔

وزیراعلی سندھ کا کہنا تھا کہ کورونا کے سبب جاں بحق ہونے والوں کی شرح 1.8 فیصد ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ایران سے 4  قسطوں میں 1380 لوگ آئے تھے جن کو سکھر میں رکھا گیا تھا اور زائرین میں سے 280 پازیٹو آئے تھے جبکہ ان میں سے 242 ٹھیک ہوکر اپنے گھروں میں چلے گئے ہیں۔

سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ اس وقت سکھر میں 38 زائرین اور گھروں میں 436 افراد زیرعلاج ہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے مزید کہا کہ اسپتالوں 59 مریض زیر علاج ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ بات بالکل بے بنیاد ہے کہ لوگ مجبور ہوکر خودکشیاں کر رہے ہیں، عوام تکلیف میں ضرور ہیں مگر ان کی حکومت ان کا بھرپور ساتھ دے رہی ہے۔

سید مراد علی شاہ نے کہا کہ جب لاک ڈاون ختم ہوگا تو زندگی نئے اصولوں کے ساتھ شروع ہوگی، آپ تمام عوام سے اپیل ہے کہ آپ سب کو اپنی اور اپنے خاندان کی صحت کا بھرپور خیال رکھیں۔

قومی خبریں سے مزید