آپ آف لائن ہیں
پیر14؍ ربیع الثانی1442ھ 30؍ نومبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

اسلام سے متعلق غلط فہمیوں سے تنگ ہندو نے اسلامک اسٹڈیز میں داخلہ لے لیا

بھارتی شہر الوار سے تعلق رکھنے والے ایک ہندو لڑکے نے اسلام سے متعلق پھلائی گئی غلط فہمیوں سے تنگ آ کر ایم اے اسلامک اسٹڈیز میں داخلہ لے لیا ہے۔

بھارتی ویب سائٹ ’دی ٹائمز آف انڈیا‘ کے مطابق بھارتی 21 سالہ شہری شوبھم یادیو کا تعلق ایک ہندو گھرانے سے ہے جس نے فلاسفی میں گریجویشن کی حاصل کر رکھی ہے، اسلام کو مکمل طور پر سمجھنے کا شوق رکھنے والا شوبھم یادیو نے ماسٹرز کے لیے اسلامک اسٹڈیز کا انتخاب کیا ہے اور اسی سلسلے میں ایک بھارتی یونیورسٹی میں داخلہ بھی لے لیا ہے۔

شوبھم یادیو کا اسلامک اسٹڈیز میں ماسٹر کرنے کے فیصلے پر کہنا ہے کہ ’اسلام سے متعلق بہت سی غلط فہمیاں پھیلائی گئی ہیں، وہ سمجھتے ہیں کہ اسلام واحد ایسا مذہب ہے جسے سب سے زیادہ غلط سمجھا گیا ہے، دنیا کے متعدد لیڈرز بھی ایسا ہی کہتے ہیں، اسی بنیاد پر اُنہیں ایسا محسوس ہوا کہ اُنہیں اپنے ماسٹرز کی ڈگری اسلامک اسٹڈیز میں کرنی چاہیے۔‘

شوبھم یادیو کا مزید کہنا ہے کہ’وہ ذاتی طور پر اسلام کو سمجھنا چاہتے ہیں تاکہ وہ مسلم اور ہندو کمیونٹی کے درمیان ایک رابطہ قائم کر سکیں اور موجودہ تناؤ کے ماحول میں اپنا کوئی کردار ادا کر سکیں۔‘

شوبھم یادیو کے والدین کے مطابق ’اُن کا بیٹا شوبھم کشمیر میں جا کر پڑھے گا جس سے متعلق اُنہیں سیکیورٹی خدشات ہیں۔‘

دوسری جانب شوبھم کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ وہ پڑھائی کے دوران 2 سال کے لیے کشمیر میں رہے گیں، اس سے قبل بھی وہ کشمیر جا چکے ہیں اور وہاں کے لوگ بہت ملنسار۔‘

شوبھم یادیو کا کہنا تھا کہ ’اُن کے خیال میں کسی ایک مذہب سے تعلق رکھنے والے افراد کے لیے ذہن میں کسی قسم کی غلط فہمیاں پیدا نہیں کرنی چاہیے۔‘

بین الاقوامی خبریں سے مزید