آپ آف لائن ہیں
اتوار13؍ ربیع الثانی1442ھ 29؍ نومبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

نیوزی لینڈ ٹور سے پہلے قومی ٹیم کو بڑا دھچکا، فخر زمان باہر ہوگئے

قومی ٹیم کو دورہ نیوزی لینڈ سے پہلے ہی بڑا دھچکا لگ گیا، بائیں ہاتھ کے اوپنر فخر زمان دورے سے باہر ہوگئے۔

پاکستان کی طرف سے واحد ڈبل سنچری اسکور کرنے والے فخر زمان قومی اسکواڈ کے ہمراہ نیوزی لینڈ روانہ نہیں ہوں گے۔

اتوار کے روز فخر زمان کو بخار کی علامات ظاہر ہوئیں، ٹیم ڈاکٹر کی جانب سے متعدد مرتبہ چیک اپ کے باوجود فخر زمان کے بخار میں کمی نہیں آئی۔

ٹیم مینجمنٹ نے اس کے بعد اسکواڈ میں شامل دیگر کھلاڑیوں، سپورٹنگ اسٹاف کی صحت اور حفاظت کے پیش نظر فخر زمان کو پاکستان اسکواڈ کے ہمراہ جانے سے روکنے کا فیصلہ کیا۔


وہ قومی اسکواڈ کے ہمراہ 23 نومبر کی صبح نیوزی لینڈ کے لیے روانہ نہیں ہوں گے، انہیں بخار کی علامت ظاہر ہونے کے بعد مکمل طور پر آئسولیٹ کردیا گیا ہے۔

ڈاکٹر سہیل سلیم کے مطابق فخر زمان کی طبیعت کے حوالے سے پاکستان کرکٹ بورڈ کا میڈیکل پینل قومی اوپنر سے مسلسل رابطے میں ہے، یہ رابطہ اُن کی مکمل صحتیابی تک جاری رہے گا۔

قومی ٹیم نے دورہ نیوزی لینڈ کے لیے فخر زمان کا متبادل نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے ۔

دورہ نیوزی لینڈ کے لیے اعلان کردہ قومی اسکواڈ میں شامل ٹیم ڈاکٹر اور پی سی بی میڈیکل پینل کے سربراہ ڈاکٹر سہیل سلیم کا کہنا ہے کہ 21 نومبر کو اسکواڈ کے دیگر اراکین کے ہمراہ فخر زمان کے لیے گئے کورنا ٹیسٹ کی رپورٹ بھی منفی آئی تھی، تاہم 22 نومبر کو ان میں تیز بخار کی علامت ظاہر ہوئیں۔

انہوں نے کہا کہ فخر زمان میں بخار کی علامت ظاہر ہوتے ہی انہیں فوری طور پر دیگر اسکواڈ سے آئسولیٹ کردیا گیا تھا۔

فخر زمان سے مسلسل رابطے میں ہیں مگر ہم اسکواڈ میں شامل دیگر اراکین کی صحت اور حفاظت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرسکتے۔

قومی اسکواڈ 23 نومبر کی صبح 3 بجے لاہور سے نیوزی لینڈ کے لیے روانہ ہوگا۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید