آپ آف لائن ہیں
ہفتہ2؍جمادی الثانی 1442ھ 16؍جنوری 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

نیب نے ڈپٹی چئیرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا کیخلاف ریفرنس دائر کردیا


نیب نے ڈپٹی چئیرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا کیخلاف ریفرنس دائرکردیا، سلیم مانڈوی والا کو کڈنی ہلز پلاٹس الاٹمنٹ کیس میں باقاعدہ ملزم نامزد کیا گیا ہے۔

سلیم مانڈوی والا پر سرکاری پلاٹس عبدالغنی مجید کو بیچنے میں اعجاز ہارون کی سہولت کاری کا الزام  ہے، سلیم مانڈوی والا کے ساتھ ندیم مانڈوی والا اور اعجاز ہارون کو بھی ملزم نامزد کیا گیاہے۔

نیب ریفرنس میں عبدالغنی مجید اور مبینہ بے نامی طارق محمود بھی ملزم نامزد کیا گیا ہے۔

نیب ریفرنس میں کہا گیا کہ اعجاز ہارون کو الاٹمنٹس کے بدلے بھاری رقوم جعلی اکاؤنٹس سے ملیں، اعجاز ہارون نے کڈنی ہلز فلک نُما میں پلاٹس کی بیک ڈیٹ فائلیں تیار کیں۔

ریفرنس  میں کہا گیا کہ سلیم مانڈوی والا نے پلاٹس عبدالغنی مجید کو بیچنے میں اعجاز ہارون کی معاونت کی، حصے میں ملی رقم سے سلیم مانڈوی والا نے بےنامی کے نام پر پلاٹ خریدا۔


 نیب ریفرنس  کے مطابق سلیم مانڈوی والانے بعد میں پلاٹ بیچ کر دوسرے فرنٹ مین کے نام پر بے نامی شئیر خریدے، جبکہ کڈنی ہلز پلاٹس کی فروخت کے بدلے رقم آئی  بھی جعلی اکاؤنٹس سے تھی۔

 ریفرنس  میں کہا گیا کہ سلیم مانڈوی والا اور اعجاز ہارون کو 14 کروڑ روپے جعلی اکاؤنٹس سےملے، سلیم مانڈوی والا، ندیم مانڈوی والا نے اسی رقم سے منگلا ویو کمپنی کے شئیر خریدے،  شئیرز بے نامی طارق محمود کے نام پر خریدے گئے۔

قومی خبریں سے مزید