آپ آف لائن ہیں
منگل29؍شعبان المعظم 1442ھ 13؍اپریل2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

اپنا نام ECL سے نکالنے کی درخواست نہیں کروں گی، مریم نواز

مسلم لیگ نون کی نائب صدر اور سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کا کہنا ہے کہ میری صحت سے متعلق ایک مسئلہ ہے، میری ایک سرجری ہونی ہے جو پاکستان میں نہیں ہوسکتی مگر حکومت سےکوئی درخواست نہیں کروں گی کہ میرا نام ای سی ایل سے نکالے، مریم باہر نہیں جائیگی، آپ کو جانا پڑے گا۔

مریم نواز نے میڈیا سے گفتگو کے دوران توقعات سے ہٹ کر سینیٹ نتائج سے متعلق سوال پر مریم نواز نےکہا کہ یہ مستقبل کی بات ہے، ہماری کوشش ہے سینیٹ میں اچھے اور سیاسی لوگ آئیں جنہوں نے سیاسی جدوجہد کی ہو، بیک ڈور رابطوں کی ضرورت ان لوگوں کو ہے جومشکل میں ہیں، پی ڈی ایم یا مسلم لیگ نون کو بیک ڈور رابطوں کی ضرورت نہیں۔

میاں نواز شریف کے پاسپورٹ کی مدت ختم ہونےکےسوال پر مریم نواز نے جواب دیا کہ میاں صاحب پاسپورٹ سے متعلق قانونی امکانات کا جائزہ لے رہے ہوں گے۔

مریم نواز سے سوال کیا گیا کہ ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نام نکلوانے کیلئے آپ درخواست دے رہی ہیں ؟ جس پر مریم نواز نے جواب دیا کہ میاں صاحب جب باہر گئے تھے تو میں نے درخواست دی تھی ، ہائیکورٹ میں میری درخواست کورونا وائرس کی وجہ سے زیر التوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میرا اپنی صحت سے متعلق بھی ایک چھوٹا سامسئلہ ہے، میری ایک سرجری ہونی ہے جو پاکستان میں نہیں ہوسکتی، فیصلہ کیا ہے کہ ای سی ایل سے نام نکلوانےکیلئےحکومت سے درخواست نہیں کروں گی۔

مریم نواز نے کہا کہ مجھےاس ملک سے کہیں نہیں جانا ،میرا جینا مرنا پاکستان کے ساتھ ہے ، یہ خوشی حکومت کو نہیں دوں گی۔

انہوں نے کہا کہ اب میں سن رہی ہوں کہ آپس میں جو مشاورت ہورہی ہے اور ایک وزیر نے بھی کہہ دیا کہ مریم کو باہر بھیج دو معاملات ٹھیک ہوجائیں گے ، مجھے اس بات چیت کا اچھی طرح علم ہے لیکن مریم ان شا اللہ باہر نہیں جائے گی اب آپ کو جانا ہوگا۔

مسلم لیگ نون کی نائب صدر نے کہا کہ گوجرانوالہ مسلم لیگ نون کا شہر ہے، مسلم لیگ نون سے پنگا لینے کی ضرورت نہیں، یوسف رضا گیلانی پی ڈی ایم کے متفقہ امیدوار ہیں، حکمران جماعت کیخلاف ہر صوبے سے لوگ کھڑے ہوگئے جس طرح سے انہوں نے ٹکٹ تقسیم کیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ تو کہتے تھے کہ 22 سال سے جدوجہد کر رہےہیں، 22 سال سے کوئی ایسا شخص ملا جس کو ٹکٹ دےسکیں، ہماری کوشش پوری ہےکہ سینیٹ میں اچھے لوگ آئیں، ن لیگ میں سب کارکنوں کو ٹکٹ ملے، ن لیگ نے ان کو ٹکٹ دیا جن کی سیاسی جدوجہد ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ مسلم لیگ ن نے عوام کی صحیح نمائندگی کا حق ادا کیاہے، میاں صاحب نے کسی ارب پتی کو ٹکٹ جاری نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ جو حالات میں دیکھ رہی ہوں، یہ نہ ہو کہ سینیٹ انتخابات کے دوران ہی تحریک عدم اعتماد آجائے، پی ڈی ایم عوام کی نمائندہ ہے اس کو  توڑنے کےخواب دیکھنے والے جلد خود ٹوٹ جائیں گے۔

مریم نواز نے کہا کہ اپوزیشن آج کم بات کررہی ہے، ان کی اپنی جماعت زیادہ بول رہی ہے، پچھلے سینیٹ الیکشن میں جو کچھ ہوا ، عوام کو سب یاد ہے، ارکان کو دھمکیاں دی گئیں ، انہیں خریدا گیا۔

مسلم لیگ نون کی نائب صدر نے کہا کہ ضمنی الیکشن چوری کرنے کی کوشش کی گئی تو کچھ چھپے گا نہیں، دھاندلی ایک حد تک ہو سکتی ہے ، عوام کھڑے ہو جائیں تو دھاندلی نہیں ہو سکتی، میرے گھر پر آ کر بھی کوئی پیشکش کرے تو باہر نہیں جاؤں گی۔


انہوں نے کہا کہ عوام پر مسلط کئے جانے والے لوگوں کا راستہ روکنا ہو گا، ملک کے ہر صوبے سے لوگ مہنگائی کے طوفان کیخلاف اٹھ کھڑے ہوئے ہیں ، عمران خان دوسری جماعتوں پر الزامات لگاتے ہیں ، خود کروڑپتی اور ارب پتی لوگوں کو ٹکٹ دیئے۔

مریم نواز نے کہا کہ ہماری کوئی خارجہ پالیسی نہیں ، دوست ممالک بھی ناراض ہو گئے ، مجھے بیوروکریسی اور سرکاری ملازمین پر ترس آتا ہے ، مجھے ایسا لگتا ہے کہ نون لیگ ڈسکہ سے الیکشن جیت چکی ہے، عوام اب نوٹوں کو قبول نہیں کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ بیوروکریسی، پولیس سب کو پیغام دینا چاہتی ہوں، آپ عوام کے خادم ہیں،حکومت کی کوئی خارجہ پالیسی پر نہیں، حکومت کی توجہ عوام کی خدمت کی طرف نہیں۔

قومی خبریں سے مزید