آپ آف لائن ہیں
جمعرات2؍ رمضان المبارک 1442ھ15؍اپریل 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

لاہور: 103سال پرانا تاریخی والٹن ایئرپورٹ ختم کرنے کا فیصلہ

لاہور کا 103 سال پرانا تاریخی والٹن ایئرپورٹ ختم کرکے اس کی جگہ پنجاب حکومت نے بزنس حب بنانے کا فیصلہ کر لیا۔

ایک اعلیٰ سطح کی کمیٹی نے اس پر کام بھی شروع کردیا ہے۔ اس کے ارد گرد 10 ایکڑ اراضی پر واقع 7 نرسریاں بھی ختم کر دی گئیں۔

والٹن ایئرپورٹ 1918ء میں برطانوی حکومت نے قائم کیا تھا۔ یہ دوسری جنگ عظیم میں برطانوی فوج کا بیس کیمپ بھی رہا۔

 گلبرگ، ماڈل ٹاؤن اور فیروز پور روڈ کا سنگم، لاہور کا والٹن ایئرپورٹ، جس کا رقبہ 12 سو کنال سے زائد ہے، یہاں سیکڑوں چھوٹے بڑے درختوں کا ایک چھوٹا سا مصنوعی جنگل آباد ہے۔ یہیں چند روز پہلے تک قائم 7 نرسیوں میں پھل دار پودوں، دلکش اور حسین پھولوں کی خرید و فروخت ہوتی تھی۔

درجنوں افراد کا روزگار اس سے وابستہ تھا۔ اب یہ نرسریاں ختم کر دی گئی ہیں۔ حکومت نے یہاں کسی درخت کو نہیں کاٹا بلکہ جدید مشینری کی مدد سے نکال کر دوسری جگہ منتقل کیا جارہا ہے۔

ایک نرسری کے  مالک میاں محمد اسحاق کے مطابق انہوں نے 1979 میں یہ جگہ سول ایوی ایشن سے کرائے پر لی تھی۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کے سابق ڈائریکٹر زکاوت حسین کا کہنا ہے کہ والٹن تاریخی ائیرپورٹ ہے۔ غیر ملکیوں سمیت ملک کے ہزاروں پائلٹ یہاں سے تربیت حاصل کر چکے ہیں۔ یہ سلسلہ اب بھی جاری ہے۔

بزنس حب منصوبے کی وجہ سے والٹن ائرپورٹ ختم ہونے سے تربیت حاصل کرنے والے دو سو پائلٹس کی تربیت میں تعطل کا خدشہ ہے۔

اس بارے میں سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ایئرپورٹ دوسری جگہ منتقل کیا جا رہے۔

خاص رپورٹ سے مزید