آپ آف لائن ہیں
جمعرات9؍ رمضان المبارک 1442ھ22؍اپریل 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

ڈسکہ سے متعلق الیکشن کمیشن کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج


قومی اسمبلی کے حلقے این اے 75 ڈسکہ سے متعلق الیکشن کمیشن آف پاکستان کا فیصلہ سپریم کورٹ آف پاکستان میں چیلنج کر دیا گیا۔

پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار علی اسجد ملہی نے الیکشن کمیشن کا فیصلہ سپریم کورٹ آف پاکستان میں چیلنج کیا ہے۔

علی اسجد ملہی کی جانب سے عدالتِ عظمیٰ سے استدعا کی گئی ہے کہ الیکشن کمیشن کا ضمنی الیکشن کالعدم قرار دے کر نیا الیکشن کرانے کا فیصلہ کالعدم قرار دیا جائے۔

درخواست گزار کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کا فیصلہ حقائق کے برعکس ہے، 19 فروری کے این اے 75 ڈسکہ کے انتخابی نتائج جاری کرنے کا حکم دیا جائے۔


درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ الیکشن کمیشن نے دستیاب ریکارڈ کا درست جائزہ نہیں لیا، این اے 75 ڈسکہ میں دوبارہ انتخابات کرانے کے حکم کا کوئی جواز نہیں ہے۔

پی ٹی آئی امیدوار علی اسجد ملہی کی جانب سے عدالتِ عظمیٰ سے یہ استدعا بھی کی گئی ہے کہ دوبارہ الیکشن کا مطلب حلقے کے عوام کو دوبارہ لاء اینڈ آرڈر کی صورتِ حال کا سامنا کرانا ہے۔

قومی خبریں سے مزید