جوانی کی اچھی عادتیں بڑھاپے میں دماغ کو صحت مند رکھتی ہیں، تحقیق
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

جوانی کی اچھی عادتیں بڑھاپے میں دماغ کو صحت مند رکھتی ہیں، تحقیق

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی سائنسدانوں نے ایک طویل مطالعے کے بعد دریافت کیا ہے کہ جو لوگ اپنی جوانی میں اچھی اور صحت مند عادتیں اپناتے ہیں، بڑھاپے میں ان کا دماغ بھی چاق و چوبند اور توانا رہتا ہے۔یونیورسٹی آف کیلیفورنیا، سان فرانسسکو میں پروفیسر ڈاکٹر کرسٹین یافی کی نگرانی میں اتحقیقات میں مجموعی طور پر 15 ہزار بالغ افراد شریک تھے جبکہ تحقیقات کے آغاز پر ان کی عمر 18 سے 30 سال اور 45 سے 95 سال کے درمیان تھی۔اس مطالعے میں جوانی کے دوران ناقص غذا، سگریٹ نوشی اور آرام پسندی جیسی عادتوں کا ادھیڑ عمری اور بڑھاپے میں خراب ذہنی صلاحیتوں سے بہت واضح تعلق سامنے آیا۔جوانی میں موٹاپے، خون میں شکر کی زیادہ مقدار (ہائی بلڈ شوگر) اور ہائی بلڈ پریشر جیسی علامات کو بھی بعد کی عمر میں ذہنی تنزلی میں اوسطاً دگنے اضافے سے مربوط دیکھا گیا۔ڈاکٹر کرسٹین اور ان کے ساتھیوں نے جوانی میں معمول سے زیادہ وزن/ موٹاپے کو ادھیڑ عمری میں دماغی تکالیف کا اہم ترین خطرہ قرار دیا ہے۔

دنیا بھر سے سے مزید