• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

تحریک انصاف 6 لاکھ 13ہزار 590 ووٹ کیساتھ سر فہرست رہی

باغ(افراز گردیزی/ نمائندہ جنگ) آزاد کشمیر کے گیارہویں عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف 6 لاکھ 13 ہزار 590 ووٹ کے ساتھ سب سے بڑی پارٹی کے طور پر سامنے آئی ہے جس نے کل 32 فیصد ووٹ حاصل کیے ہیں. مسلم لیگ نون آزاد کشمیر کم نشستوں کے باوجود 4 لاکھ 91 ہزار 91 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہی جس نے 25 فیصد ووٹ حاصل کیے, پی پی پی آزاد کشمیر 3 لاکھ 49 ہزار 895 ووٹ کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے جبکہ اس کی نشستوں کی تعداد نون لیگ سے زیادہ ہے. پی پی نے 18 فیصد ووٹ حاصل کیے. ریاستی جماعت مسلم کانفرنس نے 1 لاکھ 53 ہزار 861 ووٹ, آزاد امیدواروں نے 1 لاکھ 33 ہزار, 136 جبکہ تحریک لبیک نے انتخابات میں 94 ہزار ووٹ حاصل کیے ہیں. الیکشن کمیشن ذرائع کے اعدادوشمار کے مطابق 2016 کے انتخابات میں ٹرن آؤٹ 65 فیصد جبکہ 2021 کے انتخابات میں 62 فیصد رہا. حالیہ انتخابات میں فوج کو پولنگ اسٹیشن کے اندر نہیں رکھا گیا تھا اسے سریع الحرکت فورس کے طور پر سٹینڈ بائی رکھا گیا تھا. موجودہ الیکشن میں باغ کے پولنگ اسٹیشن نمبر 42 پر بیلٹ باکس جلا دیا گیا جبکہ شرقی باغ کے پولنگ سٹیشنوں 135 اور 136 کے پریذایڈنگ آفیسر سے پولنگ کے بعد سامان چھین لیا گیا تھا. وسطی باغ کے پولنگ اسٹیشن نمبر 115 سلہٹ میں 86 ووٹ پول ہونے کے بعد پولنگ کا عمل روک دیا گیا تھا. شرقی باغ میں سرکاری گنتی کا عمل روک دیا گیا ہے کیونکہ الیکشن کمیشن ذرائع کے مطابق بیلٹ باکس جلائے جانے والے پولنگ اسٹیشن, اور تین مزید پر دوبارہ پولنگ کے حوالے سے فیصلہ کرنا ہے تاہم پی ٹی آئی کے سردار میر اکبر خان کو مد ممقابل پی پی کے سردار قمر الزمان پر سبقت حاصل ہے۔

اہم خبریں سے مزید