• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اب یہ دُنیا قید خانہ لگتی ہے: رابی پیرزادہ

شوبز انڈسٹری سے کنارہ کشی اختیار کرنے والی سابقہ گلوکارہ رابی پیرزادہ نے کہا ہے کہ اُن کی اس نئی زندگی میں سکون نہیں، اُنہیں اب یہ دُنیا قید خانہ لگتی ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر رابی پیزادہ نے اپنی ایک تصویر شیئر کی جس میں وہ عبایہ میں ملبوس ہیں اور اپنا چہرہ ڈھانپا ہوا ہے۔

ٹوئٹر پر شیئر کی گئی تصویر میں رابی پیرزادہ درختوں پر ہاتھ رکھے کھڑی ہیں۔

رابی پیرزادہ نے اپنی تصویر شیئر کرتے ہوئے ٹوئٹ میں لکھا کہ ’’بہت سے لوگوں نے مجھ سے پوچھا رابی نئی زندگی میں زیادہ سکون ہے؟ جس کا جواب ہے ’نہیں‘۔‘‘

سابقہ گلوکارہ نے کہا کہ ’زندگی میں اب سکون نہیں ہے بلکہ اب یہ دُنیا قید خانہ لگتی ہے، اب اپنے اعمال سے ڈر لگتا ہے۔‘

اُنہوں نے کہا کہ ’ہر لمحہ فکر رہتی ہے کہ کوئی بھوکا نہ سو جائے، عبادات میں کوتاہی نہ ہو جائے۔‘

اپنے اگلے ٹوئٹ میں رابی پیرزادہ نے ایک مثال دیتے ہوئے کہا کہ ’اسی درخت کو پتھر پڑتے ہیں جس پر پھل لگے ہوں پھر پھل جس قدر میٹھے اور مقدار میں زیادہ ہوں گے پتھر بھی اسی حساب سے پڑیں گے۔‘

رابی پیرزادہ نے کہا کہ ’جو کام خالصتاََ الله پاک کی رضا اور خوشنودی کے لیے ہو، اس میں مخلوق کی طرف سے کسی قسم کی داد اور جزا کی لالچ نہیں رہتی۔‘

سابقہ گلوکارہ نے مزید کہا کہ ’یقیناََ! یہ بھی اللّه پاک کی طرف سے آزمائش ہوگی۔‘

واضح رہے کہ رابی پیرزادہ نے سال 2019 میں شوبز انڈسٹری سے کنارہ کشی اختیار کرتے ہوئے اسلامی تعلیمات کے مطابق اپنی زندگی گُزارنے کا فیصلہ کیا۔

رابی پیرزادہ نے شوبز چھوڑنے کے بعد مصوری کو اپنا ذریعۂ معاش بنالیا ہے، اس کے علاوہ وہ فلاحی کاموں میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیتی نظر آتی ہیں۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید