• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پروین بابی شیزوفرینیا میں مبتلا تھیں، مہیش بھٹ

ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک)70کی دہائی میں ہندی فلم انڈسٹری میں آئے روز تعلقات کے بننے اور ٹوٹنے کی افواہیں زیر گردش رہی تھیں۔ پروڈیوسر اور ہدیتکار مہیش بھٹ بولی وڈ کی مشہور اداکارہ پروین بابی کو ’ڈیٹ‘ کررہے تھے۔ بھارتی نیوز ویب سائٹ کے مطابق مہیش بھٹ کے پروین بابی کے ساتھ تعلقات کی یہ افواہیں اس وقت سچ ثابت ہوئیں جب خود مہیش بھٹ نے اپنے کئی انٹرویوز میں ان خبروں کی تصدیق کی۔’فلم فیئر‘ میگزین کوایک انٹرویو میں مہیش بھٹ نے 1979 کی ایک ’خوفناک‘ شام کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ وہ پروین بابی کے جوہو اپارٹمنٹ میں جب داخل ہوئے تو انہوں نے اداکارہ کی والدہ کو کوریڈور میں بیٹھے دیکھا جنہوں نے سرگوشی میں کہا کہ ’دیکھو پروین کو کیا ہوگیا ہے۔‘مہیش بھٹ نے بتایا کہ ’میں بیڈروم میں داخل ہوا جہاں ڈریسنگ ٹیبل پر لاتعداد پرفیوم رکھے ہوئے تھے، پروین نے ایک فلم کا کاسٹیوم پہن رکھا تھا اور وہ دیوار اور بستر کے درمیان سہمی بیٹھی ہوئی تھیں۔ ان کے ہاتھ میں چاقو تھا، میں نے پوچھا آپ کیا کر رہی ہیں؟ تو انہوں نے جواب دیا کہ وہ مجھے مارنے کی کوشش کر رہے ہیں، وہ میرے اوپر فانوس گرا دیں گے۔ انہوں نے میرا ہاتھ پکڑا اور مجھے باہر لے گئیں۔‘مہیش بھٹ نے ماضی کی اس یاد کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے مشہور ماہر نفسیات سے رابطہ کیا جنہوں نے کہا کہ پروین بابی شیزوفرینیا میں مبتلا ہیں۔