• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پی ٹی آئی نے عامر ڈوگر سے انٹرویو پر وضاحت طلب کرلی

اسلام آباد (خبر نگار) حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف نے وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی امور اور قومی اسمبلی میں چیف وہپ عامر ڈوگر سے وضاحت طلب کر لی ہے۔ گزشتہ روز نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کے دوران عامر ڈوگر نے کہا کہ وزیر اعظم افغان صورتحال کی وجہ سے لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کو عہدے پر رکھنا چاہتے تھے اور ان کی خواہش تھی کہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کچھ ماہ مزید عہدے پر رہیں۔ عامر ڈوگر کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ لیفٹیننٹ جنرل ندیم انجم اچھے پیشہ ور سپاہی ہیں۔ عامر ڈوگر نے یہ بھی کہا کہ ڈی جی آئی ایس آئی کیلئے تین یا پانچ نام آئیں گے اور وزیراعظم نئے ڈی جی کی منظوری دیں گے۔انہوں نے یہ بھی بتایا کہ وزیر اعظم کی باڈی لینگویج مثبت تھی اور وہ پراعتماد تھے ، انہوں نے کابینہ میں کہاکہ آرمی چیف کے ساتھ مثالی تعلقات ہیں، آج تک کسی بھی وزیر اعظم کے آرمی چیف کے ساتھ اتنے اچھے تعلقات نہیں ہوئے ہوں گے۔ عامر ڈوگر کا یہ بھی کہنا تھاکہ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میری کوئی انا نہیں ہے ، وہ ملک کے چیف ایگزیکٹو اور عوام کے منتخب نمائندے ہیں اور آرمی چیف اور اس آفس کی بھی ایک عزت اور احترام ہے۔ پاکستان تحریک انصاف نے عامر ڈوگر سے وضاحت طلب کرتے ہوئے کہا کہ اس انٹرویو سے سیاسی سطح پر غلط تاثر پیدا ہوا ہے۔

اہم خبریں سے مزید