Baber Sattar - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
پیر 28 ذیقعدہ 1438ھ 21 اگست 2017ء
بابر ستار
August 19, 2017
سسٹم فعال ہے

قوم بظاہر دو مختلف ، لیکن درحقیقت ایک جیسی چیزوں کے درمیان انتخاب کی الجھن میں گرفتار ہے ۔ ایک طرف کم کوش، اخلاقیات سے بوجھل مجسم اچھائی ہے جو احتساب اور قانون کی حکمرانی کے سنہرے دور کی نوید سنارہی ہے ۔ دوسری طرف انقلاب کا معرکہ گرم کرتے ہوئے ووٹ کے تقدس کو مبینہ سازشوں سے رہائی دلانے والے نعروں کی گونج ہے۔ ہمیں بتایا جارہا ہے کہ...
August 05, 2017
کیا انصاف ہوتا دکھائی دیا؟

امریکی سپریم کورٹ کے جسٹس رابرٹ جیکسن کا ایک مشہور بیان ہے ۔۔۔’’ہم اس لئے حتمی اتھارٹی نہیں کہ ہم بے خطا ہیں، بلکہ ہم بے خطا اس لئے ہیں کیونکہ ہم حتمی اتھارٹی ہیں۔‘‘پاناما کیس میں ہماری سپریم کورٹ کا فیصلہ جسٹس جیکسن کے الفاظ کی دانائی پر مہر ِتصدیق ثبت کرتا ہے ۔ جس فیصلے نے کسی ٹرائل کے بغیر ایک منتخب شدہ وزیر ِاعظم کو منصب سے...
July 29, 2017
کیا یہ اصلاحات کا راستہ ہے؟

پاکستان کی 70سالہ تاریخ میں ہماری سب سے بڑی ناکامی یہ رہی کہ ہم ترقی اور اصلاح کے کسی متفقہ راستے کا انتخاب نہ کر سکے ۔ ایک لمحے کے لئے سازش کی تھیوری کو ایک طرف رکھتے ہوئے فرض کرتے ہیں کہ اصلاح کے لئے جو راستے بھی اختیار کیے جارہے ہیں، اُن کے پیچھے درست نیت اور اچھا ارادہ کارفرما ہے ۔ لیکن کیا اچھی نیت کسی طرز عمل کو درست اور قابل ِ...
July 22, 2017
نجات کا شارٹ کٹ راستہ

ہم کھیل تماشوں کی رسیا ایک قوم ہیں۔ حالیہ دنوںفوری اور من پسند سیاسی نتائج کی خواہش سے بڑھ کر شاید ہی کوئی گفتگو ہوئی ہوکہ پاناما اسکینڈل نے ہمارے سیاسی نظام کی کس خامی کو آشکار کیا ہے اور اس کی اصلاح کس طرح کی جائے (آئی اے رحمان کا ’پاناما سے حاصل ہونے والا سبق‘ ایک نادر مثال ہے )۔ ہماری سیاست اس قدر منقسم اور دھڑے بندی کا شکار ہے...
July 15, 2017
منصب سے الگ ہونے کا وقت

جے آئی ٹی رپورٹ حقیقی، بامعانی اور نتیجہ خیز جسٹس کے لئے اختیار کیے جانے والے انصاف پر مبنی طریق ِ کار کی حمایت میں بذات ِ خود ایک مضبوط دلیل ہے ۔ پاناما کیس میں تین رکنی اکثریتی بنچ نے درست فیصلہ کرتے ہوئے وزیر ِاعظم اور اُن کے خاندان کے خلاف الزامات کی تحقیقات عدالت کی نگرانی میں کرانے کا حکم دیا ۔ جے آئی ٹی رپورٹ نے شریفوں کی...
July 08, 2017
کھائی اور سمندر کے درمیان

اس تنازع میں جمہوریت اور احتساب کے حامی ایک غیر جانبدار پاکستانی شہری کے لئے کیا ہے ؟اس کے سامنے ایک متناقضہ (paradox) ، ایک الجھن، ہے ۔ اکنامکس کی اصطلاح میں اس کی سپلائی سائیڈ یہ ہے کہ سول ملٹری عدم توازن کو جواز بنا کر فوجی مداخلت کو ضروری قرا ر دیا جائے کہ وردی پوش نہایت احسن طریقے سے طاقت کا توازن قائم کردیں گے ، کیا ہوا اگر اس عظیم...
June 24, 2017
مافیاز کے اصول

بعض وکلا کے رویے وکلا برادری کی بدنامی کا سبب بن رہے ہیں۔ گزشتہ ہفتے لاہور ہائی کورٹ میں چند درجن وکلا پاکستان بار کونسل( جو ہمارے پیشہ ور انہ اصول اور ضوابط طے کرنے والی سب سے ارفع باڈی ہے) کے ساتھ اظہار ِ یکجہتی کے لئےجمع ہوئے ۔ اس بار کونسل کے خلاف ایک 70 سالہ خاتون نے درخواست دی تھی ۔ اُس خاتون کو 2016 ء کے اختتام سے اب تک اپنی گمشدہ...
June 17, 2017
اشرافیہ کی باہمی کشمکش

سیاسی نظام کو کنٹرول کرنے کے لئے اشرافیہ میں جاری باہمی کشمکش عام افراد کے لئے بہت بڑی خبر اس صورت میں بن سکتی ہے جب وہ نظام ِ کہن کو تہہ و بالا کرنے اور نئی تبدیلیاں لانے کے لئے پرعزم ہوں۔ کیا پاناما سے ایسا ہوپائے گا؟ ایک حوالے سے اس کھیل میں چوائس بہت واضح ہے ۔ شریف برادران عوامی عہدہ رکھتے ہیں۔ اگر وہ یا اُن کے رشتہ دار اپنے معلوم...
June 10, 2017
قانون کی حکمرانی کی آزمائش

(گزشتہ سے پیوستہ) وزیر ِ اعلیٰ پنجاب شہباز شریف چاہتے ہیں کہ صرف اُن کے خاندان کی بجائے سب کا بے لاگ احتساب ہو۔ ایسا مطالبہ کرنے والے حکمران اشرافیہ سے تعلق رکھنے والے وہ پہلے شخص نہیں ہیں۔ جب این آر او کیس کا فیصلہ آنے کے بعد آصف زرداری کے خلاف سوئس کیس پر توجہ مرکوز ہوئی تو پی پی پی چاہتی تھی کہ احتساب کا آغاز آدم ؑ کے فرزندان،...
June 03, 2017
قانون کی حکمرانی کی آزمائش

پی ایم ایل (ن) آخر کار اپنے جذبات پر قابو نہ پاسکی۔ نہال ہاشمی نے کھلے الفاظ میں وہ بات کہہ دی جو نون لیگ کے بہت سے وفادار زیر ِ لب کہہ چکے ہیں۔ اُنھوں نے نواز شریف کا حساب لینے اور پریشان کرنے والے سرکاری افسران (جنہوں نے ریٹائر بھی ہونا ہے) کوخطرناک نتائج کی دھمکیاں دیتے ہوئے کہا کہ اُن پر پاکستان کی سر زمین تنگ کردی جائے گی۔ پی ایم...
May 27, 2017
سوشل میڈیا کو لگام ڈالنے کی کوشش

سوشل میڈیا پر دو واضح مظاہر ہمارے سامنے نمایاں ہیں۔ ایک تو ہمارے درمیان کچھ گروپس کی موجودگی،جن کے ارکان جعلی ناموں سے شر انگیز معلومات پھیلاتے رہتے ہیں۔ ان کی فعالیت مربوط اور جچی تلی ہوتی ہے ۔ اور دوسرا یہ کہ بطور معاشرہ ہم دوسروں سے منفی محرکات کے بغیر ، محض فکری اور مثبت اختلاف کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتے ۔ ہم نے اب تک یہ نہیں...
May 13, 2017
’’آئین ِ جواں مرداں‘‘ کیا ہے ؟

اُن دھڑوں کو یقینا سخت صدمہ سہنا پڑا ، اور بعض کے ہاں تو صف ِ ماتم بھی بچھی ہوئی ہے ، جوایک منتخب شدہ حکومت اور فوج کے درمیان ڈاگ فائٹ دیکھنے کی تیاری میں تھے ۔ بلکہ اب وہ فوجی ہائی کمان کے خلاف دل کی بھڑاس نکال رہے ہیں کہ اگر ڈان لیکس کوئی ایشو تھا ہی نہیں تو کیوں کہا جارہا ہے کہ یہ طے ہوگیا ہے ۔ ذرا اُن افراد کی ذہنی حالات کا تصور کریں...
May 06, 2017
پاناما کیس کا دوسرا مرحلہ

اب ہمارے سامنے پاناما فیصلے کو نافذ کرنے کے لئے تشکیل دیا جانے والا بنچ ہے ۔ اس میں بجا طور پر وہی جج حضرات شامل ہیں جنہوں نے کیس کی سماعت کی تھی اور فیصلہ لکھاتھا کہ اس کے لئے مزید تحقیقات کی ضرورت ہے ۔ یہ کارروائی ممکنہ طور پر ایسا رخ اختیار کرسکتی ہے کہ مستقبل بعیدمیں وزیر ِاعظم کو نااہل قرار دیدے ، یا پھر فاضل عدالت اُنہیں فوری...
April 29, 2017
پاناما کیس کا فیصلہ

اگر سیاسی مقبولیت اور کامیابی کا تعین اخلاقیات کرتیں توپاناما کیس کا فیصلہ شریف برادران کی سیاست کے لئے موت کی گھنٹی ثابت ہوتا۔ وزیر ِاعظم کے خلاف کیس یہ تھا کہ وہ بدعنوانی کے مرتکب ہوئے ہیں اور اُن کے زیر کفالت افراد اُن کی اعلانیہ آمدنی سے کہیں بڑھ کر اثاثوں کے مالک ہیں۔ وزیر ِاعظم نے اس بات کو تسلیم کیا کہ اُن کے بچے لندن فلیٹس...