Advertisement

پاکستان کو آخری ٹی ٹوئنٹی میں بھی شکست، سری لنکا نے کلین سوئپ کردیا

October 09, 2019
 

سری لنکا نے پاکستان کو تیسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں بھی شکست دے کر سیریز میں کلین سوئپ کردیا۔

قذافی اسٹیڈیم لاہور میں کھیلے گئے اس میچ میں سری لنکا کے کپتان دسن شناکا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

پاکستانی بولرز نے سری لنکن کھلاڑیوں کو ابتدا میں ہی دباؤ میں لیے رکھا اور اسکور کو تیزی سے بڑھنے نہ دیا۔

محمد عامر نے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 24 کے مجموعے پر 8 رنز بنانے والے گناتھیکالا کو بولڈ کردیا۔

سری لنکا کا اسکور 28 تک پہنچا تو عماد وسیم نے سماراوکراما کو آؤٹ کرکے اسے دوسرا نقصان پہنچایا۔

محمد عامر نے دوسری طرف سے دباؤ برقرار رکھا اور گزشتہ میچ کے ہیرو بھانوکا راجا پکسے کو آؤٹ کرکے سری لنکا کو مزید مشکلات سے دوچار کردیا۔

ایسے میں اوشادا فرنینڈو سری لنکا کے لیے مرد بحران بن گئے اور ایک جانب سے وکٹیں گرنے کے باوجود دوسرے اینڈ پر اپنی وکٹ کو سنبھال کر رکھا جس کے بدولت سری لنکا نے مقررہ 20 اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 147 رنز بنائے۔

اوشادا فرنینڈو نے 3 چھکوں اور 8 چوکوں کی مدد سے 78 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی۔

پاکستان کی جانب سے محمد عامر 3 وکٹیں لے کر نمایاں رہے جبکہ عماد وسیم وہاب ریاض نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

ہدف کے تعاقب میں پاکستان ٹیم نے دفاعی حکمت عملی اپناتے ہوئے روایتی انداز میں بیٹنگ کی۔

فخر زمان پہلی ہی گیند پر بولڈ ہوگئے تاہم اس کے بعد بابر اعظم اور حارث سہیل نے دوسری وکٹ پر 76 رنز کی شراکت بنائی۔

بابر اعظم 76 کے مجوعے پر 27 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے تاہم انہوں نے یہ رنز بنانے کے لیے 32 گیندوں کا سہارا لیا۔

اسی طرح حارث سہیل نے ٹی ٹوئنٹی میں اپنا سب سے بڑا اسکور بنایا جو 52 رنز تھا جس کے لیے انہوں نے 50 گیندوں کا سہارا لیا۔

ان دونوں کھلاڑیوں کے آؤٹ ہونے کے بعد قومی ٹیم کے لیے 148 رنز کا ہدف پہاڑ بن گیا۔

کپتان سرفراز احمد اور آصف علی جیسے جارح مزاج کھلاڑیوں سمیت پاکستانی بیٹسمین یکے بعد دیگرے آؤٹ ہوتے چلے گئے۔

قومی ٹیم مقررہ 20 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 134 رنز ہی بناسکی اور یوں اسے 13 رنز سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

سری لنکا کے ونندو ہسارانگا کو میچ اور سیریز کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

لاہور میں کھیلا جانے والا یہ میچ سری لنکا کے لیے اہمیت کا حامل نہیں تھا جبکہ پاکستانی ٹیم سیریز میں وائٹ واش سے بچنے کے لیے میدان میں اتری تھی۔

میچ کے لیے پاکستان ٹیم میں 3 تبدیلیاں کی گئی ہیں، احمد شہزاد، عمر اکمل اور محمد حسنین کی جگہ حارث سہیل، افتخار احمد اور عثمان شنواری کو شامل کیا گیا۔

مہمان ٹیم نے قومی ٹیم کو پہلے ٹی ٹوئنٹی میں 64 رنز سے شکست دے کر دورہ پاکستان میں اپنی پہلی کامیابی حاصل کی تھی۔

پہلے میچ کی طرح سیریز کے دوسرے میچ میں بھی سری لنکا نے پاکستان کو آؤٹ کلاس کرتے ہوئے 35 رنز سے شکست دے کر 0-2 کی ناقابل شکست برتری حاصل کرلی۔

یہ پاکستان کرکٹ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ہے کہ کسی ٹیم نے گرین شرٹس کو اس کی اپنی سرزمین پر ٹی ٹوئنٹی سیریز میں شکست دی۔


مکمل خبر پڑھیں