• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

میساچیوسٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے انجینئروں نے کاغذ جتنا باریک اور لچک دار لاؤڈ اسپیکر تیار کیا ہے جسے دیوار کے علاوہ کسی بھی سطحوں پر بہ آسانی چپکا کر بڑے لاؤڈ اسپیکر میں تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ موجودہ لاؤڈ اسپیکروں کے مقابلے میں اس ’’کاغذی لاؤڈ اسپیکر‘‘ کو صرف دس فی صد بجلی کی ضرورت پڑتی ہے۔ عام اسپیکروں اور لاؤڈ اسپیکروں میں برقی مقناطیسی (الیکٹرو میگنیٹک) اثر سے استفادہ کیا جاتا ہے لیکن اس نئے اسپیکر میں ’’داب برق اثر‘‘ (پیزو الیکٹرک ایفیکٹ) استعمال کیا گیا ہے۔پیزو الیکٹرک ایفیکٹ میں جب کسی خاص مادّے سے بجلی گزاری جاتی ہے تو وہ تھرتھرانے لگتا ہے جب کہ اس مادّے پر دباؤ ڈالا جائے تو وہ بجلی بنانے لگتا ہے۔

یہ کاغذی لاؤڈ اسپیکر معمولی بجلی گزارنے پر تھرتھراتا ہے، جس سے آواز پیدا ہوتی ہے۔بہتر کارکردگی کی غرض سے لاؤڈ اسپیکر کی سطح میں وقفے وقفے سے بال جتنے باریک سوراخ بھی کیے گئے ہیں جن کی بدولت یہ کسی بھی جگہ چپک کر آواز خارج کرسکتا ہے۔’’میٹاورس‘‘ سے انتہائی مختصر آلاتِ سماعت تک اور میوزک انڈسٹری سے ایئرو اسپیس انجینئرنگ تک، ان گنت شعبوں میں اس باریک لاؤڈ اسپیکر کا استعمال کیا جاسکے گا۔ مثلاً مسافر بردار طیاروں میں کاک پٹ کا اندرونی شور کم کرنے کےلیے وہاں کی دیواروں پر ایسے لاؤڈ اسپیکرز کی تہہ چڑھائی جاسکے گی جو اس شور کی تنسیخ کرنے والی صوتی لہریں خارج کرتے ہوئے، کاک پٹ کا اندرونی ماحول پرسکون بنائیں گے۔

سائنس اینڈ ٹیکنالوجی سے مزید
ٹیکنالوجی سے مزید