آپ آف لائن ہیں
منگل14؍ محرم الحرام 1440 ھ25؍ستمبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن


سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں دکاندار ایک عورت پر چوری کا الزام لگاکر بانس کی چھڑی کے ذریعے بڑی بے دردی پیٹ رہا ہے،سماجی ویب سائٹ پر صارفین نے دکان دار کی اس حرکت پر شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک دو خواتین ایک گارمنٹ کی دکان میں بیٹھی ہیں اسی دوران ایک دکاندار بانس کی چھڑی اٹھاتا ہے اور چوری کا الزام عائد کرتے ہو ئے عورت کو مارنا شروع کردیتا ہےلیکن اس واقعے کا زیادہ افسوس ناک پہلو یہ ہے کہ باقی دکان دار بھی اس صورت حال کو معمولی انداز میں دیکھ رہے ہیں کسی نے بھی عورت کو تشدد سے نہیں بچایا۔

اس افسوس ناک واقعے کی وڈیو کے دوسرے حصے میں ان ہی دو خواتین کوکسی گودام میں لے جایا جاتاہے اوران پر تھپڑوں اور گھونسوںکی بارش کردی خواتین جب زمین پر گر گئیں تو انہیں لاتوں سے بھی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔دکاندارنے دونوں خواتین پر اس کی دکان سے35ہزار روپے کے کپڑے چرانے کا الزام عائد کیا۔

سوشل میڈیا پرجب یہ وڈیو عام ہوئی تو لوگوں کی بڑی تعداد میں خواتین پر تشددکو ظالمانہ اقدام قرار دیتے ہو ئےتشدد کرنے والوں کےخلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

عابد خان نامی سوشل میڈیا صارف نے لکھا ہے کہ ہم اخلاقی پستیوں کی انتہا پر ہیں ، ہمیں ہنگامی طور پر تعلیم کی ضرورت ہے اس سے پہلو تہی کرنے کی وجہ سے ایسے شرم ناک واقعات وقوع پذیر ہو تے رہیں گے ۔

ایک اور صارف لکھتے ہیں کہ خواتین کو تشدد کا نشانہ بنانا مکمل طور پر غلط ہے اگر خواتین نے کوئی غلط اقدام کیا بھی تب بھی انہیں حوالہ پولیس کیا جانا چاہئے تھا نہ کہ خود سزا دینے کھڑے ہو جاتے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں