آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
پیر 24؍ذوالحجہ 1440ھ 26؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

فریال تالپور عید کی رات اسپتال سے جیل منتقل، ہمارا اس سے کوئی تعلق نہیں ، نیب

اسلام آباد(نمائندہ جنگ)نیب نے سابق صدر آصف علی زرداری کی بہن فریال تالپور کو اتوار اور پیر کی درمیانی شب پولی کلینک اسپتال سے اڈیالہ جیل منتقل کردیا۔تاہم نیب کا کہنا ہےکہ ہمارا اس کارروائی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔فریال تالپور نے کہا کہ یہ کونسا طریقہ ہے کہ ڈاکٹرز نے مجھے اسپتال بھیجنے کا مشورہ دیا اور یہ مجھے اڈیالہ لے جا رہے ہیں۔ ان بیوی بچے والوں کو شرم آنی چاہیے کہ وہ رات کے 12بجے ایک عورت کو اسپتال سے نکال کر جیل منتقل کر رہے ہیں۔ رکن سندھ اسمبلی فریال تالپور کو اسلام آباد کی احتساب عدالت نے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنے کا حکم دیا تھا تاہم خرابی صحت کے سبب انہیں اسلام آباد کے پولی کلینک اسپتال منتقل کرکے وارڈ کو سب جیل قرار دیا گیا تھا۔ اتوار اور پیر کی درمیانی شب اڈیالہ جیل منتقل کردیا گیا جس پر فریال تالپور نے شدید احتجاج کیا۔دوسری جانب نیب کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ فریال تالپور نیب کی تحویل میں نہیں ہیں، وہ جوڈیشل ریمانڈ پر ہیں جنہیں جیل حکام نے پولی کلینک اسپتال سے ڈسچارج کئے جانے کے بعد جیل منتقل کیا۔ دریں اثناءذرائع کے مطابق پیپلزپارٹی کے شریک چئیرمین سابق صدرآصف علی زرداری کی صاحب زادی آصفہ بھٹوزرداری کی جانب سے سینٹرل جیل اڈیالہ کی انتظامیہ کوایک درخواست بھجوائی

گئی ہے جس میں کہاگیاہے کہ پولی کلینک اسلام آبادکے ڈاکٹروں نے محترمہ فریال تالپورکاچیک اپ امراض قلب کے ہسپتال میں کرانے کی ایڈوائس کی ہے لہٰذافوری طورپران کاکسی اچھے کارڈیالوجی اسپتال میں مکمل چیک اپ کرایاجائے،ذرائع کاکہناہے کہ اس حوالے سے متعلقہ حکام سے باقاعدہ اجازت لینے کے بعدان کامیڈیکل چیک اپ کرایاجائے گا۔ادھرفریال تالپورکواڈیالہ جیل میں خواتین وارڈمیں واقع اسی کمرے میں رکھاگیاہے کہ جہاں مریم نوازکورکھاگیاتھااوران کی نگرانی کے لئے دیگرعملے کے علاوہ ایک خاتون اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ جیل مس صدف اورلیڈی وارڈرزکومتعین کیاگیاہے۔  

اہم خبریں سے مزید