آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل17؍محرم الحرام 1441ھ 17؍ستمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پاکستان مخالف سیریز بنانے پر ترجمان پاک فوج کا شاہ رخ خان کو جواب

راولپنڈی(نیوز ڈیسک) پاکستان مخالف ٹی وی سیریز بنانے پر ترجمان پاک فوج جنرل آصف غفور باجوہ نے شاہ رخ خان کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ بولی وڈ کی خیالی دنیا سے باہر نکلو اور حقیقت جاننے کیلئے کلبھوشن اور ابھینندن کا حشر دیکھ لو، ایسی حرکتوں کی بجائے مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم اور آر ایس ایس کی ہندو شدت پسندی و نازی ازم کیخلاف آواز بلند کرکے امن کے فروغ کی بات کرو۔بولی وڈ کنگ کے طور پر مشہور اداکار شاہ رخ خان کی جانب سے نیٹ فلیکس کیلئے خصوصی سیریز تیار کی گئی ہے۔ پاکستان مخالف اس سیریز میں جنگی جنون کو فروغ دیا گیا ہے۔ شاہ رخ خان کی جانب سے تیار کی گئی اس سیریز پر انہیں کافی تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔جبکہ اس حوالے سے اب پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور کی جانب سے بھی ردعمل دیا گیا ہے۔اپنے ذاتی ٹوئٹر اکاونٹ سے ٹوئٹ کرتے ہوئے میجر جنرل آصف غفور نے شاہ رخ خان کو مخاطب کیا اور انہیں مشورہ دیا کہ وہ بولی وڈ کی خیالاتی دنیا سے باہر نکل آئیں۔ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ شاہ رخ خان حقائق

جاننا چاہتے ہیں تو پھر پاکستان میں قید بھارتی دہشت گرد جاسوس کلبھوشن یادیو، پاک فضائیہ کے ہاتھوں مار کھانے والے بھارتی پائلٹ ابھینندن کا حشر اور 27 فروری کو بھارتی فوج کی شکست دیکھ لیں۔میجر جنرل آصف غفور کا شاہ رخ خان سے کہنا ہے کہ ایسی حرکتوں کی بجائے وہ مثبت سوچ اور عمل کا مظاہرہ کریں۔ انہیں مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم اور آر ایس ایس کی ہندو شدت پسندی و نازی ازم کیخلاف آواز بلند کرکے امن کے فروغ کی بات کرنی چاہیئے۔بھارتی فلم انڈسٹری میں کِنگ خان سے مشہور اداکار شاہ رخ خان نے آن لائن فلم اسٹریمنگ کمپنی ’نیٹ فلیکس‘ کے لئے ایک ویب سیریز پروڈیوس کی ہے، اُن کی یہ ویب سریز 7 قسطوں پر مشتمل ہے۔علاوہ ازیں شاہ رخ خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی پہلی ویب سیریز ’بارڈ آف بلڈ‘ کا ٹریلر جاری کیا تو سوشل میڈیا پر اداکارکے مداحوں کی جانب سے اُن کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔اداکار شاہ رخ خان کی یہ ویب سیریز دہشتگردی پر بنائی گئی ہے ، ’بارڈ آف بلڈ‘ بھارتی خفیہ ایجنسی کے ایسے ایجنٹ پر ہے جس کو پاکستان کے صوبے بلوچستان میں خفیہ مِشن کے لیے بھیجا جاتا ہے لیکن وہ ایجنٹ اپنے مِشن میں ناکام ہوجاتا ہے جس کے بعد بھارتی خفیہ ایجنسی اُس ایجنٹ کو نوکری سے فارغ کردیتی ہے۔نوکری سے نکال دینے کے بعد وہ بھارتی ایجنٹ ایک کالج میں پروفیسر کی نوکر ی کرنے لگ جاتا ہے لیکن کچھ ہی عرصے کے بعد وہ بھارتی خفیہ ایجنسی اُس ایجنٹ کو دوبارہ سے اُسی مِشن پر بھیجتی ہے۔’بارڈ آف بلڈ‘ کا مرکزی کردار وہ ایجنٹ ہے جِس کو پاکستان مِشن کے لیے بھیجا جاتا ہے اور اِس کِردار کو بھارتی فلم انڈسٹری کے مسلمان اداکار عمران ہاشمی نے ادا کیا ہے، اِس ویب سیریز کو پروڈیوس کرنے والا بھی مسلمان اداکار شاہ رخ خان ہے اور مرکزی کردار کرنے والا بھی مسلمان اداکار ہی ہے ، جس کے بعد یہ واضح ہے کہ یہ ویب سیریز ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت بنائی گئی ہے۔کِنگ خان کی اس ویب سیریز کے بعد اُن کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر نتاشا کُنڈی نامی ایک صارف نے کہا کہ ’شاہ رخ خان پاک بھارت کشیدہ صورتحال میں اس ویب سریز کے ذریعے اپنے رہنماوئوں کو خوش کررہے ہیں، آپ کے پاس نفرت کا اظہار کرنے کے لیے اس سے اچھا موقع نہیں ہوسکتا۔‘صحافی صباحت ذکریہ نے بھی شاہ رخ خان پر تنقید کرتے ہوئے ٹوئٹ کیا کہ ’شاہ رخ خان وہی بھارتی اداکار ہیں جو اب تک مسئلہ کشمیر پر خاموش ہیں اور اپنی دولت بڑھانے کے لیے ابھی بھی مسلمانوں کو ہی دہشتگرد دِکھا رہے ہیں۔‘دوسری جانب پاکستانی اداکارہ منشا پاشا نے بھی شاہ رخ خان کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ ’کیا بھارت کے پاس فلم بنانے کے لیے پاکستان کے علاوہ کوئی موضوع نہیں ہے؟‘ماہِ دوراں نامی ایک اور ٹوئٹر صارف نے ’لارڈ آف بلڈ‘ ویب سیریز کے خلاف ٹوئٹ کیا کہ ’پاکستان بنانے کے لیے قائداعظم کا شکریہ ادا کرتی ہوں ، شاہ رخ خان اُن بزدل مسلمان اداکاروں میں سے ہیں جن کو صرف پیسوں اور شہرت سے محبت ہے، اصل میں یہ وہ ہندو ہیں جو بھارتی منفی سوچ سے محبت کرتے ہیں۔‘واضح رہے کہ شاہ رخ خان کی اس ویب سیریز کو 27 ستمبر کو ’نیٹ فلیکس‘ پر جاری کیا جائے گا۔

اہم خبریں سے مزید