آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ9؍ربیع الثانی1441ھ 7؍دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

بھارت میں ’گائے شماری‘ کرانے کی تجویز

بھارتیہ جنتا پارٹی کے سینئر رہنما رام بروت نے ممبئی میں گائے شماری کی تجویز پیش کر دی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بی جے پی کے ممبئی میونسپل کارپوریشن سے تعلق رکھنے والے رام بروت نے مطالبہ کیا ہے کہ ممبئی میں گائے شماری کی جائے اور اُن کی دیکھ بھال اور حفاظت کے لیے گائے کے کانوں پر نمبر ٹیگ لگایا جائے تاکہ وہ مسلمانوں کی جانب سے ذبح کرنے سے محفوظ رہ سکیں۔

یہ بھی پڑھیے: بھارت میں گائے ذبح کرنے پر عیسائی کا بہیمانہ قتل

ممبئی کے 6 بار میونسپل کارپوریٹ رہنے والے رام بروت نے اس حوالے سے ایک نوٹس ’نوٹس آف موشن‘ کے نام سے جاری کیا جس کو بہت جلد زیرِ بحث لایا جائے گا۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے رام بروت کا کہنا ہے کہ ’ممبئی میں بہت تیزی سے گائے کو ذبح کیا جا رہا ہے، کیوں کہ ہندوؤں کے لیے گائے مقدس سمجھی جاتی ہے اسی لیے ہمارا فرض بنتا ہے کہ ہم اس کی حفاظت میں اپنا کردار ادا کریں۔‘

رام بروت کا کہنا ہے کہ ’اگر ہمیں گائے کی حفاظت کرنی ہے تو ہمیں ان کی شماری کرنی چاہیے، ہر گائے کا اپنا ایک شناختی نمبر ہونا چاہئے، اس وقت ہم نہیں جانتے کہ ہمارے شہر میں 2 ہزار گائے موجود ہیں یا 20 ہزار ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے شہر میں گائے ادھر سے ادھر گھومتی رہتی ہیں مگر ان کا کوئی خیال نہیں رکھتا، ان میں سے بہت ساری پلاسٹک کھانے کی وجہ سے مر جاتی ہیں مگر یہ بات کسی کو معلوم نہیں، مقدس گائے کو برآمد بھی کیا جا رہا ہے ہمیں اس کو روکنا ہوگا اوران سب مسائل کا حل صرف ان کی شماری میں ہی ہے۔‘

دوسری جانب اس بیان پر بھارتی اپوزیشن رہنما راوی راجہ کا بی جے پی پر تنقید کرتے ہوئے کہنا ہے کہ ’ ہم بھی گائے کو مقدس مانتے ہیں، مگر بی جے پی اس بیان کے بعد مکمل طور پر اپنے طے کیے ہوئے ترقی کے راستوں سے ہٹ گئی ہے، ممبئی کی ترقی کے لیے کام کرنے کے بجائے بی جے پی گائے شماری جیسے موضوع پر بات کر رہی ہے۔‘

دوسری جانب بی جے پی کے رہنما کا کہنا ہے کہ ہم صرف گاؤ رکشک پر بات کر رہے ہیں اور گائے کی حفاظت ہمارا مذہبی فریضہ ہے جبکہ اب ہم اس مطالبے کو وزیر اعظم نریندر مودی کے سامنے لے کر جائیں گے۔