آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار30؍جمادی الاوّل 1441ھ 26؍جنوری 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

شرکت گاہ کے زیر اہتمام ادارہ ثقافت بلوچستان کی آرٹ گیلری میں تصویری نمائش

کوئٹہ (اسٹاف رپورٹر) کوئٹہ میں ایک تصویری نمائش کا انعقاد کیا گیا ادارہ ثقافت بلوچستان کی آرٹ گیلری میں منعقدہ تصویری نمائش خواتین کے حقوق سے متعلق 16 روزہ بین الاقوامی آگہی مہم کا حصہ تھی اس نمائش کا اہتمام غیر سرکاری تنظیم شرکت گاہ نے کیا تھا جس کا عنوان خواتین کو ہراساں کرنا اور جنسی تشدد کا نشانہ بنانا تھا نمائش کی منتظمہ سیما نے بتایا کہ مجموعی طور پر اس نمائش میں 48 پینٹرز کی پینٹنگز کو رکھا گیا ہے ان کا کہنا تھا کہ خواتین کے اظہار رائے پر پابندی یا ان پر ہونے والے تشدد کے واقعات کو رنگوں کے ذریعے مختلف پیرائے میں بیان کیا گیا ہے شرکت گاہ کراچی سے تعلق رکھنے والی خدیجہ پروین نے بتایا کہ پینٹنگ نہ صرف ایک فن ہے بلکہ رنگوں کے ذریعے اظہار کا ایک اہم ذریعہ بھی ہے ان کا کہنا تھا کہ پینٹنگز بھی لوگوں کو متحرک کرنے کا ایک اہم ذریعہ ہے خدیجہ نے بتایا کہ مصوروں کا رنگوں کے ساتھ ایک خاص تعلق ہوتا ہے اس نمائش میں ہم نے مصوروں کو یہ موقع دیا ہے کہ خواتین کو ہراساں کرنے اور ان کو تشدد کا نشانہ بنانے کے واقعات کو وہ کس طرح دیکھتے ہیں مصوروں کے کام کو سراہتے ہوئے خدیجہ کا کہنا تھا کہ انھوں نے لوگوں کے احساسات کو صحیح معنوں میں سمجھا اور اس کا رنگوں کے ذریعے خوب اظہار کیا ان کا کہنا تھا کہ بعض پینٹنگز میں خواتین

کے ہونٹوں کو سلا ہوا دکھایا گیا ہے جس کا مطلب یہ ہے کہ خواتین کی آواز کو دبایا جاتا ہے خدیجہ کا مزید کہنا تھا کہ جہاں آپ ڈرتے ہوں تو وہاں آپ کے ساتھ بہت کچھ ہوتا ہے اور ہراساں کرنے کے واقعات وہاں ہوتے ہیں جہاں خاموشی ہوتی ہے ہمارے اس سال کے تمام پروگراموں کا مقصد یہ ہے کہ خاموشی کو توڑو اور آگے بڑھ کر اپنی آواز کو بلند کرو ۔

کوئٹہ سے مزید