آپ آف لائن ہیں
جمعرات10؍ربیع الثانی 1442ھ26؍نومبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

کنگنا رناوت کی سونیا گاندھی پر تنقید،بال ٹھاکرے پسندیدہ آئیکون قرار

ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک)کنگنا رناوت اور مہاراشٹر حکومت کے درمیان کشیدگی کم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ بی ایم سی کے ذریعہ کی گئی کارروائی کے بعد سے کنگنا رناوت کافی ناراض ہیں اور سوشل میڈیاپر مسلسل اپنی ناراضگی ظاہر کر رہی ہیں۔ حال ہی میں کنگنا رناوت نے کانگریس پارٹی کی صدر سونیا گاندھی پر سخت حملہ کیا۔ ساتھ ہی بالا صاحب ٹھاکرے کا ایک پرانا ویڈیو شیئرکرکے بتایا کہ وہ ان کے فیورٹ آئیکن تھے۔کنگنا رناوت نے حال ہی میں ٹوئٹ کرکےکانگریس کی صدر سونیا گاندھی سے سوال کئے ہیں۔ شیو سینا کے ساتھ تنازع پر کنگنا رناوت نے سونیا گاندھی کی خاموشی پر سوال کھڑا کرتے ہوئے کہا کہ ’ سونیا گاندھی جی، ایک خاتون ہونے کے ناطے کیا جس طرح آپ کی مہارشٹر حکومت نے میرے ساتھ جو برتاؤکیا، اس سے آپ کو دکھ نہیں ہوا۔ کیا آپ ڈاکٹر امبیڈکر کے ذریعہ دیئے گئے آئین کے اصولوں کو قائم رکھنے کے لئے اپنی حکومت سے گزارش نہیں کرسکتیں۔کنگنا رناوت نے بالا صاحب کا ایک ویڈیو ٹوئٹ کرکے لکھا ہ ےکہ ’گریٹ بالا صاحب ٹھاکرے، میرے

فیورٹ آئیکن میں سے ایک تھے، ان کا سب سے بڑا خوف تھا کہ شیو سینا کسی دن اتحاد کرلے گی اور کانگریس بن جائے گی۔ میں جاننا چاہتی ہوں کہ اپنی پارٹی کی یہ حالت دیکھ کر ان کو آج کیا محسوس ہو رہا ہوگا؟ یہ ویڈیو تب بھی خوب وائرل ہوا تھا، جب مہاراشٹر میں بی جے پی کا ساتھ چھوڑ کر شیو سینا نے کانگریس اور این سی پی کے ساتھ مل کر حکومت بنائی۔کنگنا رناوت کی والدہ نے بھی بی ایم سی کی کارروائی اور ممبئی میں سیاسی پارٹیوں کے رویے پر ناراضگی ظاہر کی تھی۔ کنگنا رناوت نے ممبئی ہائی کورٹ میں بی ایم سی کے خلاف درخواست دائر کی تھی، جس پر جمعرات کو سماعت ملتوی کردی گئی ۔ بی ایم سی کی کارروائی کے بعد کنگنا رناوت اپنے دفتر کا جائزہ لینے کے لئے جمعرات کو پہنچی جہاں ان کے چہرے پر مایوسی عیاں تھی۔ اس کے بعد کنگنا رناوت نے ٹوئٹ کیا تھا کہ ان کے پاس دفتر رینوویٹ کروانے کے لئے پیسے نہیں ہیں اور وہ ٹوٹے پھوٹے آفس سے ہی کام کریں گی۔

دل لگی سے مزید