آپ آف لائن ہیں
بدھ8؍رمضان المبارک 1442ھ21؍ اپریل 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

اسلام کامعاشی نظام ہی بحرانوںکاحل ہے، لیاقت بلوچ

لاہور (نیوزرپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان و سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ حکومتی نااہلی ، ناکامی اور عوام دشمن حربوں کے خلاف پورا ملک سراپا احتجاج ہے ۔ حکومت ملک کے نظام کے لیے کنفیوژن کا شکار ہے ۔ عمران خان نظام پر بھی یوٹرن لیتے چلے جارہے ہیں ۔ ریاست مدینہ نظام کے ساتھ ایران ، چین ، امریکہ جیسا نظام لانے کی باتیں قیام پاکستان کے مقاصد سے انحراف ہے ۔ اسلام کی حکمرانی اور قرآن و سنت کا نظام ہی پاکستان کا نظام ہے خود انحصاری ، اپنی قوم پر اعتماد اور اسلام کا معاشی نظام ہی بحرانوں کا حل ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے وہاڑی جامع الاسلامیہ جدیدہ کی سالانہ ختم بخاری تقریب ، بہاولپور میں عوامی جلسہ اور صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ جمہوری ، انتخابی اور پارلیمانی نظام قیادت کی تبدیلی اور ریاستی نظام کے استحکام کا ذریعہ ہے لیکن انتخابی نظام کو داغدار اور مذاق بنا دیا گیا ہے ۔عمران خان سرکار نے چیئرمین سینیٹ ، ایوان بالا انتخاب اور ضمنی انتخاب پر ڈاکہ مارا ہے ۔ جماعت اسلامی نے انتخابی اصلاحات کے لیے سفارشات کی دستاویز تیار کر لی ہے ۔ تمام سیاسی ،دینی اور قومی قیادت سے ملاقات کر کے انتخابی اصلاحات پر قومی کردار کے لیے تیار کریں گے ۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ قرض ،سود ، کرپشن ، بدعنوانیوں کی لعنت سے مہنگائی ، بے روزگاری ، لاقانونیت اور میرٹ کی پامالی عوام کے لیے عذاب بن گئی ہے ۔ زراعت ، تجارت ،صنعت کے لیے پیداواری لاگت کا بوجھ ناقابل برداشت ہوگیاہے ۔ زراعت قومی معیشت کی شہ رگ ہے لیکن شہ رگ کو ہی کاٹ کر ملک و ملت کو آئی ایم ایف ، ایف اے ٹی ایف کا غلام بنادیا ہے۔
لاہور سے مزید