آپ آف لائن ہیں
جمعرات9؍ رمضان المبارک 1442ھ22؍اپریل 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

عدالتی فیصلہ پی ڈی ایم جماعتوں کی اخلاقی وقانونی فتح ہے۔سید ناصرحسین شاہ

صوبائی وزیر اطلاعات سندھ ناصر حسین شاہ کا کہنا ہے کہ سینیٹ الیکشن سے متعلق عدالتی فیصلہ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) جماعتوں کی اخلاقی وقانونی فتح ہے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سید ناصر حسین شاہ نے اپنے ایک اہم بیان میں کہا ہے کہ نا اہل اور سلیکٹڈ حکمرانوں کو ایک بار پھر قانونی محاذ پر شکست ہوئی، عدالتی فیصلہ پی ڈی ایم جماعتوں کی اخلاقی و قانونی فتح ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 226 میں سینیٹ انتخابات کا طریقہ کار واضح تھا، پھر بھی خواہشات پر قانون سازی کی کوشش کی گئی، حکمرانوں کی ضد نے نا صرف عدالتوں کا وقت تباہ کیا بلکہ قوم کو بھی پریشان کیا، الیکشن کمیشن کے این اے 75 کے فیصلے سے بھی اپوزیشن مؤقف کی فتح ہوئی،  اس بات پرخوشی ہوئی کہ سپریم کورٹ نے بھی آئین کے مطابق فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آئین اور قانون کے مطابق فیصلوں سے ملک مضبوط اور مستحکم ہوگا، سلیکٹڈ حکمرانوں نے اپنی نااہلی چھپانے کے لیے ریاستی اداروں کو آپس میں لڑانےکی کوشش کی، ایوان صدر کی بھی ساکھ متاثر کرنے کی کوشش کی گئی۔

سید ناصر حسین شاہ کا کہنا تھا کہ اب صدر مملکت بھی آرڈیننس فیکٹری بند کر دیں کیوں کہ ان کے جاری کردہ آرڈیننس قانونی نہیں ہوتے،  پی ٹی آئی کو اپنے پارلیمنٹیرین پر اعتماد نہیں، اس لیے خفیہ بیلٹنگ کا فیصلہ لینا چاہتی تھی۔

اُن کا وزیر اعظم عمران خان سے متعلق  کہنا تھا کہ عمران خان کا ہمیشہ امپائر کی انگلی کے اشاروں پر انحصار رہا ہے، سینیٹ انتخابات میں ٹکٹوں کی غلط تقسیم پر ان کے اراکین آج بھی ناراض ہیں، خان صاحب نے تمام صوبوں سے صرف اپنے رشتہ داروں اوراے ٹی ایمز کو ٹکٹ دیئے۔

سیدناصرحسین شاہ نے کہا ہے کہ چیف جسٹس پاکستان سے گزارش ہے کہ صدر آصف علی زرداری نے بھی ایک صدارتی ریفرنس دائر کیا تھا، اس کو بھی ٹھیک کیا جائے۔

قومی خبریں سے مزید