زین ملک کی بینڈ کے ممبر سے دوستی کیوں نہیں ہوئی؟
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

زین ملک کی بینڈ کے ممبر سے دوستی کیوں نہیں ہوئی؟

پاکستانی نژاد برطانوی گلوکار اور بینڈ ’ون ڈائریکشن ‘ کے سابق ممبر زین ملک نے 2015 میں بینڈ سے علیحدگی کے بعد باقی کے بینڈ ممبرز سے اپنے تعلقات کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے بینڈ کے کسی بھی ممبر کو دوست بنانا پسند نہیں کیا۔

بینڈ کے ساتھی گلوکار لوئس ٹاملنسن نے بھی زین کے بینڈچھوڑنے کے بارے میں اپنی خاموشی توڑ دی ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق زین نے انکشاف کیا ہے کہ پانچ سال ایک ساتھ اسٹوڈیوز ریکارڈ کرنے اور اسٹیج پر گزارنے کے باوجود وہ بالکل اسی طرح بینڈ سے علیحدہ ہوئے جیسے اس کا حصہ بنے تھے ۔

اس بارے میں بات کرتے ہوئے زین نے کہاکہ ’میں نے بینڈ کے کسی بھی ممبر کو دوست بنانا پسند نہیں کیا۔‘

انہوں نے مزید کہا کہ ’یہ ایسی کوئی چیز نہیں ہے جسے کہتے ہوئے میں ڈرتا ہوں۔ میں نے یہ اس لیے نہیں کیا کیونکہ مجھے لوگوں پر اعتماد نہیں کرپاتا ۔‘

میڈیا رپورٹس کے مطابق گلوکار زین ملک کے اپنے بینڈ کےباقی ممبران کے ساتھ تعلقات 2016 میں زیادہ خراب ہوگئے تھے ۔


جب گلوکار لوئس ٹاملنسن کی والدہ کا انتقال ہوا تھا اور اس سے کچھ ہی دیر قبل وہ ڈی جے اسٹیو آوکی کے ساتھ ایکس فیکٹر میں پرفارم کررہے تھے۔

اس جذباتی پرفارمنس کے بعد باقی بینڈ اس مشکل وقت کے دوران اپنے دوست کی حوصلہ افزائی کرنے کے لیے اسٹیج کے پیچھے پہنچے لیکن زین اس وقت کہیں نظر نہیں آئے۔

اس واقعے کے بعد زین کے بارے میں بات کرتے ہوئے لوئس نے کہا کہ ’ہمارے تعلقات اتنے خراب اس سے پہلے کبھی نہیں تھے۔‘

لوئس نےمزید کہا کہ ’میں نے اپنی ماں کے انتقال کے بعد اسے کافی کالز کی تھیں ، باقی ساری لڑکے اس پرفارمنس کے لیے آنے پر راضی تھے لیکن زین نہیں تو اس پر مجھےبہت غصہ آیا۔‘

ایک سال بعد ، زین نے انکشاف کیا کہ ان کی ابھی بھی کسی بھی بینڈ ممبر سے بات نہیں ہوتی ہے ۔

انہوں نے مزید کہاکہ ’ہمارے تعلقات یقیناً پہلے سے بدل گئے ہیں جب ہم ایک ساتھ بینڈ میں تھے لیکن مجھے لگتا ہے کہ بس یہی زندگی ہے۔‘

انٹرٹینمنٹ سے مزید