• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

امربیل کی مکمل صفائی کے بغیر دوبارہ پھیلنے کا خدشہ


جیو نیوز کی خبر پر کراچی میں امربیل کے خاتمے کے لئے کے ایم سی حرکت میں آئی اور اس نے اپنی حدود میں آنے والے درختوں سے بیل کی صفائی کا کام شروع کردیا۔

امربیل کو ہٹانے کا کام انتہائی پیچیدہ ہے اور جس طرح سے امربیل کی صفائی کی جارہی ہے اس سے امربیل کے دوبارہ پھیلنے کا امکان برقرار رہے گا۔

کارساز پر 12 سے زائد درختوں سے امربیل کو ہٹایا گیا، یہ زیادہ تر کونو کارپس کے درختوں پر پائی گئی۔ یہ پیراسائیٹ پودا ہے جو اپنی غذا کے لئے میزبان پودے کو ختم کردیتا ہے۔

درختوں کی قاتل امربیل کو ہٹایا جارہا ہے۔ لیکن اس کا چھوٹا سا بھی حصہ اگر رہ جائے تو نہ اسے مٹی کی ضرورت ہے اور نہ پانی کی بلکہ اسے میزبان پودے کی ضرورت ہوتی ہے جس سے لپٹ کر یہ پھر سے پھیل جاتی ہے اور اس وقت سڑک پر جابجا اس کے ٹکڑے بکھرے نظر آرہے ہیں۔

امربیل کو ہٹانا انتہائی پیچیدہ عمل ہے، ماہرین اس کی مکمل صفائی کے بغیر مزید پھیلنے کا خدشہ ظاہر کررہے ہیں۔

جیو نیوز کی ٹیم نے صدر، پرانی سبزی منڈی اور یو بی ایل اسپورٹس کمپلیکس کے اطراف امر بیل کی نشاندہی کی تھی۔ لیکن یہ دیگر علاقوں میں کئی درختوں کو نشانہ بناچکی ہے ماہرین ماحولیات کا کہنا ہے متعلقہ اداروں کو اس سنگین ماحولیاتی مسئلے کے تدارک کے لئے فوری سرگرم ہونا ہوگا۔

خاص رپورٹ سے مزید