• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

فلسطین-اسرائیل جنگ پر عرفان پٹھان نے کنگنا کو خوب سنادی

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بولی وڈ اداکارہ کنگنا رناوت کا ٹویٹر اکاونٹ حال ہی میں معطل کردیا گیا ہے ، اس کے باوجود وہ سوشل میڈیا پر سرگرم رہتی ہیں اور اپنے خیالات شیئر کرنے کیلئے انسٹاگرام کا سہارا لے رہی ہیں ۔ انہوں نے اسرائیل ۔ فلسطین کے معاملہ میں سوشل میڈیا پر اسرائیل کی حمایت کی ہے ۔ اسی درمیان سابق آل راؤنڈر عرفان پٹھان نے کنگنا کو اس معاملہ پر خوب سنائیں ۔عرفان پٹھان نے سوشل میڈیا پر منگل کو فلسطین کی حمایت کی تھی ۔ انہوں نے ساتھ ہی کگیسو ربادا کے ٹویٹ کو بھی ری ٹویٹ کیا ، جس میں انہوں نے ʼ#PrayforPalestineʼ لکھا تھا ۔ اسی دوران بولی وڈ اداکارہ کنگنا رناوت نے انسٹاگرام اسٹوری پراپنا میسیج شیئر کیا ۔ کنگنا نے اپنی ایک انسٹاگرام اسٹوری میں ممبر اسمبلی دنیش چودھری کا ٹویٹ بھی شیئر کیا ۔کنگنا رناوت نے فلسطین کے شہر غزہ پر اسرائیل کے سبھی فوجی حملوں کی تعریف کی اور اس کو شدت پسند اسلامی دہشت گرد کے خلاف لڑائی بتایا ۔ انہوں نے لوگوں کو اسرائیل سے کچھ سبق سیکھنےاور دہشت گردی کے خلاف لڑائی کی مخالفت اور زبانی تنقید نہیں کرنے کا بھی مشورہ دیا ۔کنگنا رناوت نے اپنی انسٹاگرام اسٹوری پر لکھا کہ جو لوگ سوچتے ہیں کہ دہشت گردی کا جواب دھرنا اور سخت تنقید سے دیا جانا چاہئے ، انہیں اسرائیل سے سیکھنا چاہئے ۔ کنگنا نے مزید لکھا کہ شدپ پسند اسلامک ٹیررازم سے اپنے ملک اور لوگوں کو بچانا ہر ملک کا بنیادی حق ہے اور ہندوستان اس میں اسرائیل کے ساتھ کھڑا ہے ۔ادھر کیرات سے بی جے پی کے ممبر اسمبلی دنیش چودھری نے اپنے ٹویٹ میں لکھا تھا کہ عرفان پٹھان کو دوسرے ملک سے اتنا لگاؤ ہے ، لیکن اپنے ملک میں بنگال پر ٹویٹ نہیں کرپائے ۔عرفان پٹھان نے جواب دیتے ہوئے لکھا کہ میرے سبھی ٹویٹ انسانیت یا باشندگان وطن کیلئے ہوتے ہیں ، اس میں اس شخص کا ذاتی نظریہ ہوتا ہے ، جس نے ملک کی اعلی سطح پر نمائندگی کی ہے ۔ وہیں مجھے کنگنا ، جن کا اکاؤنٹ نفرت پھیلانے کی وجہ سے معطل کردیا گیا ہے اور کچھ ایسے لوگ جن کے پیڈ اکاؤنٹ سے صرف نفرت پھیلائی جاتی ہے۔

دل لگی سے مزید