• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

مفتی منیب الرحمن نے عمران خان کے خواتین کےلباس کے بیان کی تائید کردی

سابق چیئرمین رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان نے وزیراعظم عمران خان کے عورتوں کے مختصر لباس سے مردوں کے جذبات کے بھڑک اٹھنے سے متعلق بیان کی تائید کردی۔

مفتی منیب نے عمران خان کے امریکی چینل کو دیئے انٹرویو پر انہیں خراجِ تحسین پیش کیا اور امریکا کو اڈے نہ دینے اور خواتین کے مختصر لباس  کے حوالے سے واضح مؤقف پر داد و تحسین پیش کی۔

مفتی منیب کے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر جاری بیان میں کہا گیا کہ ہم خواتین کے لباس کے حوالے سے وزیراعظم کے مؤقف کی تحسین و تائید کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’اگرچہ لبرل عناصر کیلئے یہ بات بہت تکلیف دہ ہے، ہمیں ان سے ہمدردی ہے لیکن عمران خان کا مؤقف درست ہے۔‘

مفتی منیب نے وزیراعظم کے امریکا کو ہوائی اڈے نہ دینے کے صاف انکار کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ امریکا کو اڈے دینے کی تاریخ پاکستان کیلئے انتہائی حد تک روح فرسا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ’ماضی میں پاکستان نے  بھاری قیمت ادا کی ہے، یہ سراسر خسارے کا سودا ہے۔‘

مفتی منیب کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ہماری دعا ہے کہ وزیراعظم اپنے بیانات پر ہر صورت قائم رہیں اور کبھی یوٹرن  نہ لیں۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے پیر کو امریکی ٹی وی کو انٹریو میں ملک میں فحاشی اور جنسی زیادتیوں کے واقعات پر بات کرتے ہوئے کہا کہ مرد کوئی روبوٹ نہیں، عورت کے مختصر لباس سے مرد کے جذبات بھڑک جاتے ہیں۔

اسی انٹرویو میں وزیراعظم نے امریکا کو افغانستان میں کارروائی کرنے کے لیے پاکستان میں اڈے دینے سے صاف انکار کر دیا۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ سرحدپار انسداد دہشت گردی مشن کے لیے پاکستان سی آئی اے کو ہوائی اڈے نہیں دے گا، امریکا افغان جنگ میں سب سے زیادہ نقصان پاکستان نے اٹھایا، امریکا کو افغانستان سے انخلا سے قبل وہاں سیاسی سیٹلمنٹ کرنی چاہیے۔

خاص رپورٹ سے مزید