Rehmat Ali Raazi - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
جمعہ 27 رمضان المبارک 1438ھ 23 جون 2017ء
رحمت علی رازی
June 04, 2017
بیوروکریسی کی کارکردگی اور مراعات کا ریکارڈ بھی تو عام کیا جائے

افسر شاہی کا مفہوم سرکاری بادشاہت کے سِوا کچھ اور نہیں لیا جا سکتا۔ حکومتیں آمد و جامد کی گردان کی دَست بند ہیں، مگر حکمرانوں کے حقہ بان یا سرکاری بادشاہ مسندِ اقتدار کے اصل مختارِ کُل ہیں۔ دادا سے لے کر اَب پوتا تک بھی ان کی موروثی راج سیوا کے قلعے پاکستان کے بے بَس شُودری عوام کیلئے آج بھی براہمن سماج کے اُتم مندروں کا درجہ...
May 07, 2017
عدالت اس کا بھی سخت نوٹس لے

(گزشتہ سے پیوستہ ) چند کارنامے پنجاب کی ایک یونیورسٹی کے بھی ملاحظہ ہوں: یونیورسٹی کی ایڈمنسٹریٹو تقرریوں اور ترقیوں میں جس طرح میرٹ، آئینی و قانونی اہلیت اور تجربہ کو پسِ پشت ڈال کر آئوٹ آف ٹرن، تقرریاں اور ترقیاں کی گئیں ہیں ان کی مثال شاید ہی کسی اور تعلیمی ادارے میں ملتی ہو۔ یونیورسٹی کی انتظامیہ آئین و قانون سے بالا تر...
April 30, 2017
عدالت اس کا بھی سخت نوٹس لے!

تعلیم و تدریس انتہائی اہم اور مقدس شعبہ ہے جبکہ تعلیمی ادارے تقدیس و تہذیب کی علامت کا درجہ رکھتے ہیں۔ تدریسی اداروں کے نصاب میں ہر برائی کی ممانعت اور اچھائی کی تلقین پر زور دیا جاتا ہے۔ یہ تصور بھی کسی انسانی معاشرے میں موجود نہیں ہوگا کہ جن درس گاہوں میں ابنِ آدم کو جانور سے انسان بنانے کیلئے بھیجا جاتا ہے، وہاں کسی منفی سرگرمی...
April 23, 2017
وزیراعظم مستعفی ہو جائیں ؟

پانامالیکس کے بکھیڑے کو پاکستان کی سرزمین پر نازل ہوئے قریب قریب ایک سال ہو چکا ہے۔ رواں برس 4جنوری کو سپریم کورٹ کے نئے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کے نوتشکیل کردہ پانچ رُکنی لارجر بنچ نے مقدمے کے ہر پہلو پر فریقین کے وکلاء سے سوالات اُٹھائے، 23 فروری کو کیس کا فیصلہ محفوظ کیا اور 57دن بعد جمعرات کو اس کا تفصیلی فیصلہ عوام کے سامنے لایا...
April 16, 2017
وردی نہیں، پولیس کی ذہنیت اور تھانہ کلچر بدلو

(گزشتہ سے پیوستہ) وردی تبدیل کرنے سے کہیں بہتر ہوتا اگر آئی جی پنجاب تھانہ کلچر اور پولیس کا نظام بدلنے کی مخلصانہ کوششیں کرتے۔ پنجاب میں پولیس کا نظام انتہائی ابتری کا شکار رہا ہے۔ پولیس کا محکمہ جبر و تشدد، لاقانونیت اور کرپشن میں ناکوں ناک دھنسا ہوا ہے، یہاں تک کہ مقامی تھانوں کے چھوٹے سے بڑے سب اہلکار جرائم میں براہ راست ملوث...
April 09, 2017
وردی نہیں، پولیس کی ذہنیت اور تھانہ کلچر بدلو

ان دنوں پنجاب پولیس کی نئی یونیفارم کے کافی چرچے ہیں۔ آئی جی پنجاب پنجاب پولیس کا کردار تو تبدیل نہ کرپائے، نہ ہی تھانہ کلچر کا خاتمہ کرسکے، مگر عین ریٹائرمنٹ کے وقت انہوں نے پنجاب پولیس کی وردی ضرور تبدیل کردی! ان کے نزدیک شاید وردی ہی پولیس کے نظام کی ضامن ہے جسے کالے رنگ نے آلودہ و فرسودہ کر رکھا تھا۔ سوال یہ ہے کہ کیا کالا رنگ...
April 03, 2017
یہ بابو اُردو کی دال نہیں گلنے دیں گے!

(گزشتہ سے پیوستہ)پھر تو جیسے حکومت کو بھی جواز مل گیا اور وزیراعظم نواز شریف نے پے درپے انگریزی میں خطابات شروع کر دیئے جس سے جلا لے کر سرکاری سیکرٹریوں نے مقتدرہ قومی زبان کے اکلوتے ماہرین سے جو پیشہ ورانہ اصطلاحات کے تراجم مانگے تھے، وہ سب آرڈرز کینسل کر دیئے، اس طرح نفاذِ اردو کی بیل منڈھے چڑھتے چڑھتے رہ گئی۔ جسٹس جواد ایس...
April 02, 2017
یہ بابو اُردو کی دال نہیں گلنے دیں گے!

تقسیم ہند سے قبل مسلمانوں کو خدشہ تھا کہ کانگریس اقتدار میں آنے کے بعد ہندی کو سرکاری زبان کا درجہ دیدے گی مگر اردو کو سرکاری زبان بنانے کا خواب تو پاکستان حاصل کرنے کے بعد بھی شرمندۂ تعبیر نہ ہو سکا، کیونکہ ہماری خودسر بیورو کریسی نے کبھی اردو کی ترویج کو اہمیت ہی نہ دی بلکہ مشرقی پاکستان سمیت پانچوں صوبوں کی مادری زبانوں کو...
March 26, 2017
حکمرانوں کی زیادتیاں ۔امیدواروں کو سزا نہ دیں

وطن عزیز میں حکمرانوں نے اداروں پر اثر انداز ہونے کی سعی ہمیشہ کی ہے تاہم انتظامی اداروں کو زیرِ نگیں کرنے کی کوشش بعض اوقات حکمرانوں کیلئے مشکلات کا باعث بنتی رہی ہے، پسند ناپسند کی بنیاد پر سرکاری افسران کے تقرر و تبادلے اور ترقیاں و عدم ترقیاںہر حکومت کی بنیادی ترجیحات رہی ہیں،پروموشن کے معاملہ میں حکمرانوں یا ان کے وفاداروں...
March 19, 2017
میرٹ کا بار بارقتل کرنیوالوں کا بھی کبھی احتساب ہوگا؟

سرکاری افسران کی ترقیوں کے معاملہ میں ہر بار کی طرح اس مرتبہ بھی ’’فیورٹ ازم‘‘ کا کھیل کھیلا گیا‘ سی ایس بی 2016ء کی سفارشات کو خاطر میں نہ لانے کی پی ایم آفس کی حماقت پر میڈیا پیہم تنقید کے نشتر برسا رہا ہے‘ حیرت ہے کہ کس طرح ایک ’’مہا منشی‘‘ اپنی پسند ناپسند کے مطابق اہم ترین بیورو کریٹوں کے اعمالنامے سیاہ و سفید کررہا ہے۔ جن...
March 08, 2015
نوکر شاہی میں اِصلاحات۔ عملدرآمد کون کرائے گا؟

ہم نے گزشتہ کالم میں عرض کیا تھا کہ آئی سی ایس ہو یا پی اے ایس، سی ایس پی ہو یا ڈی ایم جی مکمل طور پر غیر ٹیکنیکل ہے لہٰذا اِن افسران کو لاء اینڈ آرڈر بحال رکھنے کیلئے سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن میں تو تعینات کیا جا سکتا ہے مگر ایک ہی آفیسر کا بطور سیکرٹری ہیلتھ ، سیکرٹری ایجوکیشن، سیکرٹری اریگیشن، سیکرٹری سی اینڈ ڈبلیو تعینات...
March 01, 2015
نوکر شاہی میں اِصلاحات ۔عملدرآمد کون کرائے گا؟

گزشتہ دنوں وزیراعظم نے بیوروکریسی کو کھری کھری سناتے ہوئے کہا تھا کہ ’’ملک کی بیوروکریسی ایسے مہاکلاکار افسروں پر مشتمل ہے جو مطلوبہ اہلیت، قوتِ فیصلہ اور مستقبل کے چیلنجوں سے نبردآزما ہونے کی صلاحیتوں سے بالکل عاری ہے‘ نتیجتاً عوام کے گمبھیر مسائل حل ہونے کی بجائے مزید بڑھ رہے ہیں‘‘۔ ہم تو شروع سے ہی حکمرانوں کو باور کراتے...
February 23, 2015
ترک وزیراعظم ’’احمد لاہوری‘‘ سے ایک یادگار ملاقات

(گزشتہ سے پیوستہ) انہوں نے کہا کہ مشکلات کے باوجود پاکستان کا مستقبل روشن ہے۔ وہ پاکستان سے والہانہ محبت کے اظہار میں جن جذبوں کا ذکر اور نشاندہی کر رہے تھے‘ اسکی داد دئیے بغیر نہیں رہا جا سکتا۔ اُنکی گفتگو کے دوران ایڈیٹرز کے ذہنوں میں بہت سے سوالات جنم لینے لگے، خود ہمارے ذہن میں بھی بہت سے ایسے سوالات تھے جن کا تعلق ترکی کے نظامِ...
February 22, 2015
ترک وزیراعظم ’’احمد لاہوری‘‘ سے ایک یادگار ملاقات

اس بار ہم سول سروسز ریفارم پر لکھنا چاہتے تھے کہ اچانک سی پی این ای کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر جبار خٹک نے اطلاع دی کہ ترک وزیراعظم احمد دائود اوغلو سی پی این ای کے عہدیداروں سے ملنا چاہتے ہیں۔ ہم اسلام آباد پہنچے تو ان سے منگل کی رات ساڑھے نو بجے ہماری ملاقات طے تھی لیکن ترک وزیراعظم نے سارے دن کی بے پناہ جاں گسل مصروفیات کے باوجود رات...