پاکستان کے مشکل ترین پلان پر عمل کا FATF نے اعتراف کیا: Hammad Azhar

February 26, 2021


وفاقی وزیرِ صنعت و پیداوار حماد اظہر کہتے ہیں کہ پاکستان کو دنیا کی تاریخ کا سب سے مشکل پلان دیا گیا، ایف اے ٹی ایف نےاعتراف کیا ہے کہ پاکستان کسی بھی ملک کو دیئے جانے والے مشکل ترین اور جامع ایکشن پلان پر عمل پیرا ہے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیرِ صنعت و پیداوار حماد اظہر نے کہا کہ آج سے 2 سال پہلے 2 نکات پر تھے، آج 24 نکات پر آ گئے ہیں، پہلا ہدف تھا پاکستان کو بلیک لسٹ سے روکا جائے، الحمد لِلّٰہ وہ ہدف حاصل کیا، ایف اے ٹی ایف نے کہا کہ بلیک لسٹنگ پاکستان کیلئے اب آپشن نہیں رہا۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس آپشن تھا کہ کوروناوائرس کی وباء میں ہم رپورٹنگ نہ کریں، اب ایف اے ٹی ایف بھی کہہ رہا ہے کہ پاکستان 90 فیصد اہداف پورے کر چکا ہے، تین اہداف رہ گئے ہیں، وہ بھی جلد پورے کر لیں گے، کورونا کی وباء کے سخت حالات میں پاکستان نے اپنے اہداف پورے کیئے۔

حماد اظہر کا کہنا ہے کہ پاکستان ایف اے ٹی ایف کی دہری جانچ پڑتال میں ہے، قوم کو یقین دلانا چاہتے ہیں کہ پاکستان سے بلیک لسٹنگ کا خطرہ ٹل چکا، ہم ایف اے ٹی ایف کے ایکشن پلان کو پورا کریں گے، کوشش ہے کہ جون تک 27 نکات پورے کر لیں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ ایف اے ٹی ایف تکنیکی فورم ہے، جس کے اہداف سےمتعلق شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا، بھارت نے پاکستان کے خلاف کھیلنے کی کوشش کی اور بے نقاب ہوا، دہشت گردی کی فنانسنگ میں بھارت اب خود بے نقاب ہو رہا ہے، ایف اے ٹی ایف میں بھارت نے اپنے مذموم عزائم استعمال کرنے کی کوشش کی۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ دہشت گردی سے فنانسنگ کا تعلق ہے، دہشت گردی سے متعلق فنانسنگ پر جزوی عمل درآمد ہو چکا ہے، حکومت ملی تو ٹاسک تھا بلیک لسٹ سے بچنا ہے، پاکستان دنیا کے مشکل ترین ٹاسک پر 90 فیصد عمل درآمد کر چکا ہے، سخت حالات کے باوجود پاکستان نے مثالی کام کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایف اے ٹی ایف نے یہ بھی کہا کہ اب پاکستان کو بلیک لسٹ کا خطرہ نہیں، قوم کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ بلیک لسٹ نہیں ہوں گے، جون تک تمام 27 شرائط پوری کرنے کیلئے کوشاں ہیں، ایف اے ٹی ایف کا ہر ٹاسک دوسرے سے مختلف ہے۔

حماد اظہر نے مزید کہا کہ گرے لسٹ کے باعث پاکستان پر کوئی پابندیاں عائد نہیں ہوئیں، باقی 3 نکات میں نان پرافٹ آرگنائزیشن کی ریگولیشن شامل ہے، باقی 3 نکات پر عمل اور ٹیرر فنانسگ روکنے کیلئے مزید سخت اقدامات کرنا ہوں گے، پاکستان دہشت گردوں کی مالی معاونت کی تفتیش کو مضبوط کرے گا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ دہشت گردوں اور کالعدم تنظیموں کی مالی معاونت کے خلاف تفتیش کو مضبوط کرنا ہوگا، دہشت گردوں کی مالی معاونت کے خلاف تفتیش کے ٹھوس نتائج کو یقینی بنانا ہو گا، کالعدم تنظیموں کے افراد کے خلاف مالی پابندیوں پر عمل درآمد یقینی بنانا ہو گا، پاکستان بلیک لسٹ کی طرف نہیں جائے گا، پوری دنیا میں پلان مکمل ہونے پر پاکستان کو مختلف نظر سے دیکھا جا رہا ہے۔