قضا نمازوں کا حکم اوراس کاطریقہ

April 30, 2021

آپ کے مسائل اور اُن کا حل

سوال: میری عمر 26 سال ہے ۔میں اپنی زندگی کی قضا نمازیں پڑھنا چاہتا ہوں۔ اس بارے میں کیا حکم اورطریقہ ہے؟ (شکیل احمد ،تونسہ شریف)

جواب: جو نمازیں قضا ہوئی ہیں، ان پر توبہ واستغفار کیجیے، آئندہ کسی صورت نماز قضانہ کرنے کا عزم کیجیے اور بلوغت کےبعد جتنی فرض نمازیں اور وتر ادا نہیں کئے ہیں ،ان کو ادا کیجیے۔ اگرنمازوں کی درست تعداد یاد نہ ہو تو غالب گمان پرعمل کرتے ہوئے نمازیں لوٹاتے رہیں، یہاں تک کہ یقین ہوجائے کہ اب میرے ذمہ کوئی نماز باقی نہیں ہے۔ ہر نماز کے ساتھ ایک نماز کی قضا کرلیا کریں یا دن رات میں کوئی وقت مخصوص کرکے ایک دن کی قضاء پڑھ لیا کریں۔ اگر فجر کی قضا کرنی ہو تونیت اس طرح کریں کہ میرے ذمے جتنی فجر کی قضا نمازیں ہیں، ان میں سے سب سے پہلی کی قضا کرتا ہوں۔ اسی طرح دیگر نمازوں میں بھی نیت کرلیا کریں۔ (مراقی الفلاح شرح نور الايضاح (1 / 173)۔حاشیۃ الطحطاوی علیٰ مراقی الفلاح(1/447)