• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

لانگ مارچ بھی ہوگا، حکومت بھی جائے گی، قمر زمان کائرہ


پیپلز پارٹی کے رہنما قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ لانگ مارچ بھی ہوگا اور اس حکومت کا جانا بھی ہوگا، اگر پی ڈی ایم سے ہتک آمیز رویے کا سامنا نہ ہوتا تو آج تک یہ حکمران جا چکے ہوتے۔

پیپلز پارٹی کے رہنماؤں نیئر بخاری اور قمر زمان کائرہ نے سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کی۔

اس موقع پر قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ خورشید شاہ کی ضمانت ملک میں تمام جمہوریت پسندوں کو مبارک ہو، جس طرح خورشید شاہ کی ضمانت ہوئی اسی طرح کیس بھی ختم ہوجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ خورشید شاہ کو پیپلزپارٹی سے وفا کی سزا مل رہی ہے، جمہوری کارکن کو سزا دی جارہی ہے، یہ آوازیں دبانے والی بات ہے، ہم قانون کی عدالت میں بھی بے گناہ ہوں گے، ہم اپنے راستے سے نہیں ہٹیں گے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ملک میں آئینی حکمرانی کا دور ضرور آئے گا، پیپلزپارٹی اللٌٰہ کے اشارے اور عوامی نعرے پر چلتی ہے، سب سے پہلے پیپلز پارٹی نے عوام کے لیے آواز اٹھائی۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے نیئر بخاری نے کہا ہے کہ عدالتوں کو ایگزیکٹو کے ساتھ منسلک نا کیا کریں، آج ہمیں آئینی عدالت سے میرٹ پر ضمانت ملی ہے، پی ڈی ایم کے پچیس مارچ کے لانگ مارچ کو سبوتاژ کس نے کیا؟ اگر لانگ مارچ ہو جاتا تو یہ حکومت ایوان میں نہ ہوتی۔

انہوں نے مزید کہا کہ پراسیکیوٹر آکر کہتے تھے کہ ہم نے سپلیمنٹری ریفرنس فائل کرنا ہے، انصاف کے تقاضے مدنظر رکھتے ہوئے خورشید شاہ کو ضمانت ملی ہے، موجودہ حکمرانوں نے شاہ صاحب کے خلاف جھوٹے الزامات پر مقدمات بنائے۔

ان کا کہنا تھا کہ موجودہ حکمرانوں نے خورشید شاہ کیخلاف مقدمات بنائے جن کی کوئی بنیاد نہیں تھی۔

قومی خبریں سے مزید