• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

بہتر تعمیراتی ڈیزائن کی حامل عمارتوں کی تعمیر

گھر کی سجاوٹ کی جب بات آتی ہے تو سب سے پہلی نگاہ خالی دیواروں پر پڑتی ہے، جنہیں اگر آپ کوئی خاص انداز فراہم کردیا جائے تو اس سے پورے گھر کی آرائش میں اضافہ ہوجاتا ہے۔ تاہم، مشکل اس وقت پیش آتی ہے جب اس بات کا فیصلہ ہی نہ ہو پائے کہ دیواروں کی آرائش آخر کس انداز میں کی جائے جس سے گھر کو چار چاند لگ جائیں۔ ا س بات کا انحصار دیوار کی بناوٹ، مٹیریل اور اس سے بھی بڑھ کر آپ کے منفرد آئیڈیا پر ہے۔ انٹیریئر ڈیزائننگ کے ماہرین اس سلسلےمیں کچھ مشورے دیتے ہیں۔

متضاد رنگوں کا استعمال

دیواروں کو پُرا ثر بنانے کا سب سے عمدہ طریقہ یہ ہے کہ اس کے رنگ اور اردگرد موجود اشیا کے رنگوں میں کھلا تضاد رکھا جائے۔ انسان کے بنائے ہوئے مٹیریل اور قدرتی اشیا کے درمیان رنگوں کا تضاد خاص طور پر گہر ا اثر چھوڑتا ہے۔ مثال کے طور پر کنکریٹ کی سرمئی رنگوں والی دیواروں میں اگر ایک سبز دیوار نظر آئے گی تو و ہ دیکھنے والے کو چونکا کر رکھ دے گی اور وہ اس کی داد دیے بنا نہیں رہ سکے گا۔ 

دیوار کو انفرادیت بخشنے کے سلسلے میں زیادہ بھڑکیلے رنگ نہ کروائیں یا ایسے آرٹ ورک نہ بنادیں جو دل لبھانے کے بجائے طبیعت پر بُرا اثر ڈالیں۔ دیواروں کی خوبصورتی بڑھانے کے لیے منتخب کردہ مٹیریل میں یہ دیکھنا ضروری ہے کہ وہ باقی ماحول کے ساتھ مطابقت اختیار کر جائے، صرف ایک دیوار کو ہی نہیں بلکہ زمین کی تزئین کو بھی ذہن میں رکھیں۔

3D وال پیپر

عام کاغذ کی طرح آسانی سے لگ جانے ولا تھری ڈی وال پیپر دُگنا اثر رکھتا ہے اور دیوار پر حقیقت میں بنائے جانے والے ڈیزائن کی نسبت کہیں سستا ہے، ساتھ ہی ماحول کو منفرد بنانے کے لیے بھی بہتر ہوتاہے۔ حقیقت سے قریب نظر آتا تھری ڈی وال پیپر دیوار پر سجی کسی پینٹنگ کی مانند نظروں کو خیرہ کر دینے والی خوبصورتی کا حامل ہوتا ہے اور اپنے حیرت انگیز فریب نظر (illusion)کی و جہ سے عام اور جدید گھروں کی دیواروں کو حیرت انگیز بنا دیتا ہے۔

لکڑی سے آرائش

اگر آپ اپنے گھر کے ڈرائنگ روم یا بیڈروم کی دیوار کو لکڑی سے مزین کرنا چاہتے ہیں تو اس کے لیے اعلیٰ قسم کی لکڑی کا انتخاب کرنا ہوگا۔ یعنی دیوار کو ڈھانپنے کے لیے ایسی لکڑی کا انتخاب کرنا چاہیے جو اچھی حالت میں ہو اور تمام نقائص سے پاک ہو تاکہ یہ ہر موسم سے نبرد آزما ہو سکے۔ لکڑی عام طور پر صاف اور مکمل طور پر قابل استعمال حالت میں ہونی چاہیے۔ لکڑی کو مختلف انداز یا ڈیزائن میں دیوار پر لگایا جاسکتا ہے۔ اگر آپ کو لکڑی کے مکانات اور ڈیزائن پسند ہیں تو گھر کی دیواروں کی لکڑی کے ذریعے آرائش کا یہ آئیڈیا یقیناً آپ کو بھائے گا۔

جیومیٹرک اشکال

آجکل جیومیٹرک اشکال بہت اِن ہیں اور یہ بہت ہی نمایاں دکھائی دیتی ہیں۔ یہ جدیدیت کی علامت ہیں لیکن اس کے لیے یہ ضروری ہے کہ جیومیٹرک اشکال اور رنگ گھر کی باقی سجاوٹ کے ساتھ ہم آہنگ ہوں۔ دیواروں پر لکیریں یا لائنیں بناتے وقت مختلف انداز بنائے جاسکتے ہیں، یہاں تک کہ ان کو مزید بولڈ کرنے کی کوشش کی جاسکتی ہے۔ لکیریں ساخت اور سجاوٹ کا ایک اہم حصہ ہیں کیونکہ وہ جدید ، آسان ، خوبصورت نظر آسکتی ہیں۔

عمودی باغیچہ

اگر آپ گھر کی کسی دیوار کو خاص انداز دینا چاہتے ہیں تو اس کے لیے ورٹیکل گارڈن (عمودی باغیچہ) بھی بہترین ہے۔ آپ اس دیوار پر مختلف اقسام کے پھول پودے نہیں لگانا چاہتے تو صرف ایک قسم کے پودےسے بھی کام چل جائے گا، جن کی دیکھ بھال کے حوالے سے بھی آپ کو زیادہ تردد نہیں کرنا پڑے گا۔ البتہ دیوار کے حساب سے کسی بھی پودے کو منتخب کرنے سے پہلے اس کے سائز کے بارے میں جاننا ضروری ہے۔

دیواریں نہ بھریں

اگر آپ کی دیواریں دیکھنے میں شاہکار لگتی ہیں تو ان پر سے غیرضروری چیزوں کو ہٹا دیں۔ پینٹنگز لگائیں لیکن پوری دیوار کو پینٹگز سےنہ بھریں۔ آرٹ ورک کو صرف دیوار کی دلکشی بڑھانے کے لیے ہی استعمال کیا جائے۔ کسی بھی عنصر کو غیر متوازن نہیں ہونا چاہیے۔ اس بات کو یقینی بنائیں کہ دیواریں گھر کی تمام چیزوں کے ساتھ ہم آہنگی پیدا کرکے اس کی دلکشی میں اضافہ کریں۔

مواد کا انتخاب

دیواروں کو ڈھانپنے (Cover) کے لیے مٹیریل کا انتخاب کرتے وقت آپ کو ایک ایسےا سٹرکچرکا انتخاب کرنا چاہیے جو آپ کے کمرے کے مطابق ہو اور مخصوص اسٹائلش عناصر کو نمایاں کرے۔ بعض اوقات متضاد ٹیکسچر تو منتخب کرلیا جاتا ہے مگر کچھ انداز و اطوار میں یہ جچتا نہیں ہے۔ اس سلسلے میں آپ کوانٹیریئر ڈیزائنر کی خدمات حاصل کرنے کی ضرورت ہوگی۔ 

اس کے علاوہ، اپنے آپ کو آسانی سے دستیاب اور استعمال میں آسان مواد کو منتخب کرنے تک محدود نہ رکھیں۔ اگر آپ فیچر وال تیار کررہے ہیں تو اس کے ساتھ ساتھ ڈیزائن کے ہر ایک عنصر پر بھی توجہ دیں تاکہ آپ صرف ایک کمرے نہیں بلکہ اپنے پورے گھر کے آرائشی رجحانات سے ہم آہنگ ہوں۔